The news is by your side.

کراچی میں ڈکیتی مزاحمت پر سندھ اسمبلی کے آفیسر کی گاڑی پر فائرنگ

کراچی کے علاقے گلشن حدید میں ڈاکوؤں نے سندھ اسمبلی کے اسٹاف آفیسر نبی بخش لغاری کو لوٹنے کی کوشش کی اور مزاحمت پر ان کی گاڑی پر فائرنگ کر دی۔

ڈاکو جب اسٹاف آفیسر سندھ اسمبلی نبی بخش لغاری کو لوٹنے آئے تو انہوں نے مزاحمت کی جس پر مسلح ملزمان نے ان کی گاڑی پر فائرنگ کی۔

فائرنگ سے نبی بخش لغاری محفوط رہے۔ پولیس اور شہریوں نے موقع پر دو ڈکیتوں کو اسلحے سمیت پکڑ لیا۔

کراچی میں ڈکیتی کی وارداتوں میں آئے روز اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے جبکہ قانون نافذ کرنے والے ادارے اسے کنٹرول کرنے میں تاحال ناکام ثابت ہوئے ہیں۔

متعلقہ: کراچی میں پولیس مقابلے میں دو ڈاکو زخمی حالت میں گرفتار

یاد رہے کہ 4 جنوری کو ڈاکوؤں نے گورنر ہاؤس سندھ کے افسر کو لوٹ لیا تھا۔ متاثرہ افسر محمد صالح نے اے آر وائی نیوز کو بتایا تھا کہ میں گورنر ہاوس یوٹیلیٹی اسٹورز کا انچارج ہوں، کل داؤد چورنگی کے قریب گاڑی روکی اور نماز کے لیے اترا، گاڑی میں میرے 3 بیٹے اور بیٹی بیٹھے ہوئے تھے۔

محمد صالح نے بتایا تھا کہ ڈاکوؤں نے میری بیٹی کو تھپڑ مار کر موبائل چھین لیا اور وہ چیختی رہی، ون 5 پر دو بار فون کیا تو وہ کمپلین سننے آئے، مجھے کہا گیا کہ شکل دکھاؤ ملزم کی تو ہم گرفتار کریں۔

اس واقعے سے دو روز قبل جوہر آباد تھانے کی حدود میں وزیر اعلیٰ سندھ کے پروٹوکول آفیسر کو بھی ڈاکوؤں نے لوٹ لیا تھا۔ آفیسر کے ساتھ کینیڈا سے آئے مہمان بھی لٹ گئے تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں