The news is by your side.

Advertisement

آٹے کا بحران تاحال جاری، چکی کا آٹا 70 روپے کلو میں فروخت

کراچی / لاہور : ملک بھر میں آٹے کا بحران تاحال جاری ہے، عوام آٹے کی تلاش میں سرگرداں پھررہے ہیں، کہیں آٹا دستیاب ہی نہیں تو کہیں مل بھی رہا ہے تو اتنا مہنگا ہے کہ شہریوں کی قوت خرید سے باہر ہے۔

تفصیلات کے مطابق حکومتی دعوؤں کے برعکس ملک بھر میں آٹے کا بحران جاری ہے، کہیں آٹا نایاب تو کہیں انتہائی مہنگا کہ خریدنے والے سوچنے پر مجبور ہوجائیں۔

کراچی میں آٹا تاحال ستر روپے فی کلو میں فروخت ہورہا ہے۔ ذرائع کے مطابق فائن آٹا پینسٹھ روپے اور چکی کا آٹا ستر روپے میں فروخت کیا جارہا ہے۔

مہنگائی کے مارے شہریوں کا کہنا ہے کہ اب گزارا نہیں ہوتا، کھانے میں روٹی کا استعمال کم کردیا ہے اس ہوشربا مہنگائی میں دو وقت کی روٹی کھانا مشکل ہوچکا ہے۔

شہریوں نے آٹے کے بحران سے پریشان ہو کر حکومت سے ریلیف کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ گھر کی ضرورت سے انتہائی کم آٹا دیا جا رہا ہے  لہذا اس مسئلے کا جلد از جلد حل کیا جائے۔

دوسری جانب کراچی میں چائے کے ہوٹل مالکان اپنے ہوٹل بند کرنے کا سوچ رہے ہیں، ان کا کہنا ہے کہ آٹا، چینی، پتی اور دودھ سب مہنگا ہوگیا ہے۔

علاوہ ازیں لاہور میں آٹا چکی مالکان کی ہڑتال دوسرے روزبھی جاری ہے۔ چکیاں بند ہونے کے باعث عوام آٹے کی تلاش میں رل گئے۔

چکی مالکان کا کہناہے کہ فلورملز کی طرز پر گندم فراہم کی جائے تو پپینتالیس روپے کلو میں آٹا فروخت کریں گے، مہنگی گندم خرید کرسستا آٹا فروخت نہیں کرسکتے۔

مزید پڑھیں: وزیراعظم عمران خان نے گندم بحران پر تحقیقاتی کمیٹی قائم کر دی

واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے گندم بحران پر تحقیقاتی کمیٹی قائم کرنے کی ہدایت کر دی ہے، مذکورہ کمیٹی گندم بحران کے اصل ذمہ داروں کا تعین بھی کرے گی۔

وزیراعظم کی جانب سے قائم کردہ 3 ارکان پر مشتمل تحقیقاتی کمیٹی کی سربراہی ڈی جی ایف آئی اے کریں گے، آئی بی، اینٹی کرپشن پنجاب کے ممبران بھی کمیٹی میں شامل ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں