The news is by your side.

Advertisement

ایل او سی پر بلااشتعال فائرنگ، بھارتی ناظم الامور کی دفتر خارجہ طلبی

اسلام آباد: پاکستان نے بھارتی فوج کی جانب سے ایل او سی پر شہری آبادی کو نشانہ بنانے پر بھارتی ناظم الامور کو دفتر خارجہ طلب کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان نے لائن آف کنٹرول پر بھارتی فوج کی بلا اشتعال فائرنگ اور سیز فائر کی خلاف ورزی پر بھارتی ناظم الامور کو دفتر خارجہ طلب کرکے شدید احتجاج کیا۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق ڈی جی سارک زاہد حفیظ چوہدری نے بھارتی ناظم الامور گورواہلووالیا کو طلب کیا، بھارتی فورسز نے جندروٹ اور کھوئی رٹہ سیکٹر میں شہری آبادی کو نشانہ بنایا تھا.

ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ بھارتی فوج کی فائرنگ سے خاتون شہید اور ایک بچی زخمی ہوئی تھی، رواں سال بھارت 882 بار فائر بندی معاہدے کی خلاف ورزی کرچکا ہے۔

مزید پڑھیں: ایل او سی پر بھارتی فوج کی فائرنگ سے خاتون شہید، 8 سالہ بچی زخمی

واضح رہے کہ ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار نے بھارتی فوج کی ایل او سی پر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی پر گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ بھارتی فوج کی جندروٹ، کھوئی رٹہ سیکٹر کی شہری آبادی پر فائرنگ کی ہے جس کے نتیجے میں 36 سالہ یاسمین بی بی شہید اور 8 سالہ عطیہ ظہیر زخمی ہوگئی۔

میجر جنرل بابر افتخار نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا تھا کہ بھارتی فوج کی فائرنگ سے زخمی ہونے والی بچی کو فوری طور پر طبی مرکز منتقل کردیا گیا ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ مودی کو اقتدار ملنے سے ہندو توا، سیفران دہشتگردی بھارت میں انتہا پر پہنچ گئی ہے، مودی نے آر ایس ایس کے انتہا پسند نظریے، تشدد کی پالیسی کو سرحد پار تک پھیلا دیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں