The news is by your side.

Advertisement

جنوبی پنجاب صوبہ بنانے کے لیے دو تہائی اکثریت نہیں، شاہ محمود قریشی

 وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ جنوبی پنجاب صوبے کا قیام پی ٹی آئی کےمنشورکاحصہ ہے لیکن صوبہ بنانے کے لیے ہمارے پاس دو تہائی اکثریت نہیں۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ اس حوالے سے پارٹی چیئرمین کی ہدایت پر پی پی اور ن لیگ کی قیادت کو خط لکھے لیکن تاحال دونوں جماعتوں کا کوئی جواب نہیں دیا۔

شاہ محمود قریشی کا مزید کہنا تھا کہ پی پی، ن لیگ چاہتے تو اپنے دورمیں جنوبی پنجاب صوبےکیلیے کچھ کرسکتے تھے لیکن دونوں جماعتیں اپنے دور اقتدار میں صوبہ تودرکنارسیکریٹریٹ بھی نہ بناسکے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نےسیکرٹریٹ بنا کر جنوبی پنجاب صوبےکی بنیاد رکھ دی ہے جب کہ اس حوالے سے جلد ہی مزید پیشرفت کررہا ہوں، جنوبی سیکریٹریٹ کے قیام سے یہاں ترقی کا نیا دور شروع ہوا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اپوزیشن سے ملکی ترقی ہضم نہیں ہورہی، وہ کبھی صدارتی نظام تو کبھی اسمبلیوں کے خاتمے کی قیاس آرائیاں کرتی رہتی ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود نے بلدیاتی نظام کے حوالے سے کہا کہ پنجاب میں نئےبلدیاتی نظام سےعوام کوریلیف ملےگا تاہم سندھ میں بلدیاتی نظام پراپوزیشن کی تمام جماعتوں کواعتراض ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں