وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی آج اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کریں گے
The news is by your side.

Advertisement

وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی آج اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کریں گے

نیویارک : وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی آج اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اکہترویں اجلاس سے خطاب کریں گے، جس میں وہ مسئلہ کشمیر اجاگر کرنے کے ساتھ ساتھ افغانستان میں قیام امن اور امریکی ترجیحات پر پاکستان کا موقف پیش کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق امریکہ میں کئی روز سے مصروف وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی آج اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کریں گے، شاہ محمود قریشی اپنے خطاب میں مسئلہ کشمیر، دہشتگردی کے خلاف پاکستان کی کامیابیوں، بھارت کی آبی جارحیت اور طالبان کے حوالے سے اہم امور پرپاکستان کا موقف پیش کریں گے۔

افغانستان کے حوالے سے امریکی خواہشات بھی وزیر خارجہ کے اجلاس کے اہم نکات میں شامل ہوں گی۔

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے وزیرخاجہ کو ایل او سی پر بھارتی جارحیت ، کشمیر میں بھارتی مظالم اورمتنازع ڈیموں کی تعمیر کے معاملات بھر پور انداز میں اٹھانے چاہیئں۔

خیال رہے بھارت کی جانب سے مذاکرات سے فرار اور پاکستان پر تازہ ترین الزمات کےبعد شاہ محمود قریشی کا خطاب زیادہ اہمیت اختیار کرگیا ہے۔

دوسری جانب وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل سے ملاقات کی، ملاقات میں جنوبی ایشیائی خطےکی صورتحال پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پاکستان تمام پڑوسی ممالک سے دوستانہ تعلقات چاہتا ہے، پاکستان بھارت سے تمام معاملات پر بات چیت کیلئے تیار ہے، بھارت بامعنی مذاکرات سے آنکھیں چرا رہا ہے۔

مزید پڑھیں : اقوام متحدہ مسئلہ کشمیر کےحل کےلیےاپنا کردارادا کرے‘ شاہ محمود قریشی

وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ بھارت نےنیویارک میں وزرائےخارجہ کی طے شدہ ملاقات منسوخ کی،اقوام متحدہ کشمیر پر منظور کردہ قراردادوں پر عملدرآمد کرائے اور خصوصی نمائندہ مقرر کرے۔

شاہ محمود قریشی کی روسی وزیرخارجہ سرگی لاوروو سے بھی ملاقات ہوئی ، جس میں وزیرخارجہ نےعلاقائی صورتحال پر روشنی ڈالی جبکہ روس کی جانب سے پاکستان کے توانائی شعبے میں تعاون کو سراہا۔

وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی کی نائجر کے وزیرخارجہ سے بھی ملاقات ہوئی ، ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا، شاہ محمود قریشی نے مسئلہ کشمیر پر نائجر کے اصولی موقف کو سراہا۔

نائجر وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ کشمیری عوام کی جائزجدوجہد کی بھرپور حمایت جاری رکھیں گے،  نئی پاکستانی حکومت کے ساتھ ملکر کام کرنے کے منتظرہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں