The news is by your side.

’پاکستان جیسے ملک سیلاب اور بڑھتے قرضوں کے بوجھ تلے دبے ہیں، جی 20 خصوصی فنڈ قائم کرے‘

نیویارک: سیکریٹری جنرل اقوام متحدہ انتونیو گوتریس نے کہا ہے کہ پاکستان جیسے ملک سیلاب اور بڑھتے قرضوں کے بوجھ تلے دبے ہیں، جی 20 خصوصی فنڈ قائم کرے۔

تفصیلات کے مطابق اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے افتتاحی خطاب کرتے ہوئے سیکریٹری جنرل انتونیو گوتریس نے کہا کہ موسمیاتی تبدیلی سے دنیا کو خطرات لاحق ہیں، گرین ہاؤس گیسز کا اخراج موسمیاتی تبدیلی کی بڑی وجہ ہے، اس کی وجہ سے کئی ممالک کو قدرتی آفات کا سامنا ہے۔

یو این سیکریٹری جنرل نے کہا ہماری دنیا خطرے میں ہے، اور مفلوج ہے، تعاون اور بات چیت ہی آگے بڑھنے کا واحد راستہ ہے، کسی بھی بڑے عالمی چیلنج کو ’رضامندی کے اتحاد‘ سے حل نہیں کیا جا سکتا، ہمیں دنیا کے اتحاد کی ضرورت ہے۔

انھوں نے کہا موسمیاتی تبدیلی کی وجہ سے عالمی سطح پر غیر معمولی بارشیں تباہی پھیلا رہی ہیں، پاکستان میں سیلاب سے بڑے پیمانے پر تباہی پھیلی، متاثرہ ممالک عالمی برادری کی جانب سے ٹھوس اقدامات کے منتظر ہیں۔

ان کا کہنا تھا موسمیاتی تبدیلی سے نمٹنے کے لیے عملی اقدامات کی ضرورت ہے، ترقی یافتہ ممالک آگے بڑھیں، ہمیں توانائی کے روایتی ذرائع سے ہٹ کر قابل تجدید ذرائع کی جانب جانا ہوگا، پائیدار ترقی کے لیے غریب اور ترقی یافتہ ممالک کو ساتھ لے کر چلنے کی ضرورت ہے۔

انتونیو گوتریس نے کہا جی 20 جیسے ترتی یافتہ ممالک کو ترقی پذیر ممالک کی مدد کے لیے آگے آنا ہوگا، ترقی پذیر ممالک پر قرضوں کا بوجھ کم کرنے کے لیے عالمی سطح پر اقدامات کی ضرورت ہے، اور ایک مؤثر حکمت عملی درکار ہے۔

انھوں نے کہا ترقی پذیر ممالک کی خصوصی مدد کے لیے جی 20 ممالک کو خصوصی فنڈز قائم کرنا چاہیے، پاکستان جیسے ملک سیلاب کے ساتھ بڑھتے قرضوں کے بوجھ سے نبرد آزما ہیں۔

یو این سیکریٹری جنرل نے کہا ہمیں عام آدمی کے مسائل حل کرنے کے لیے خصوصی توجہ دینا ہوگی، ترقی پذیر ملکوں پر قرضوں کا بوجھ کم کر کے عوام کے لیے ترقی کے مواقع پیدا کرنا ہوں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں