The news is by your side.

Advertisement

آسٹریلیا: لاپتہ بچی ‘پراسرار طور’ پر بند گھر سے برآمد، پولیس ہکابکا

آسٹریلیا میں اپنے خیمے سے لاپتہ ہونے والی چار سالہ لڑکی ایک بند گھر سے ’ٹھیک حالت‘ میں مل گئی۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق کلیئو اسمتھ نامی بچی اپنے اہلِ خانہ کے ساتھ مغربی آسٹریلیا کے ایک علاقے میں خیمے میں رہتی ہے، جہاں سے وہ گذشتہ ماہ لاپتہ ہوگئی تھی۔

بچی کے لاپتہ ہونے پر مقامی پولیس میں کھبلی مچی اور بچی کی تلاش کے لئے کم وبیش 100 افسران کو ہوائی، سمندری اور زمینی تلاش پر لگایا گیا تھا۔

کلیئو کی والدہ ایلی اسمتھ نے واقعے سے متعلق بتایا کہ واقعے کے روز وہ صبح چھ بجے اٹھیں تو انہوں نے دیکھا کہ ان کے خیمے کی زپ کھلی ہوئی ہے اور ان کی سب سے بڑی بیٹی ٖغائب ہے۔

یہ بھی پڑھیں: برازیل کا عجیب و غریب حرکتیں کرنے والا طوطا، پولیس بھی پریشان

انہوں نے سوشل میڈیا کے زریعے عوام سے اپیل کی تھی کہ ان کی بیٹی کو تلاش کرنے میں مدد کی جائے جس کے نتیجے میں آسٹریلیا بھر سے انہیں مدد ملی۔میڈیا رپورٹ کے مطابق ایک پندرہ دن  بعد مغربی آسٹریلیا کی پولیس نے بچی کو ایک بند گھر میں برآمد کیا یہ گھر اس جگہ سے کچھ دیر کی دوری پر ہے جہاں سے وہ لاپتہ ہوئی تھی۔

پولیس کے نائب کمشنر بلانچ کا کہنا تھا کہ ایک افسر نے اسے گود میں اٹھا کر جب اس کا نام پوچھا تو اسے نے کہا میرا نام کلیئو ہے، جائے وقوعہ سے پولیس نے 36 سالہ شخص کو حراست میں لیا اور پولیس نے کلیئو کے ملنے کے کچھ دیر بعد اسے اس کے والدین کے حوالے کردیا۔

کلیئو کی والدہ ایلی اسمتھ نے انسٹاگرام پر اپنی خوشی کا اظہار کرتے ہوئے لکھا کہ ’ہماری فیملی دوبارہ مکمل ہوگئی ہے۔‘

پولیس افسر بلانچ نے مقامی ریڈیو کو بتایا کہ کلیئو کے ملنے پر انہوں نے ’تجربہ کار جاسوسوں کو خوشی سے روتے ہوئے دیکھا‘۔ بلانچ نے بازیابی کو ’ناقابلِ یقین‘ قرار دیا، ’ایسا کم ہی ہوتا ہے، یہ کچھ ایسا ہے جس کی ہم سب دل میں امید کر رہے تھے اور یہ سچ ہوگیا ہے۔

واضح رہے کہ کلیئو کو تلاش کرنے کے لیے پولیس نے متعلقہ فوٹیج اور فرانزک تجزیے استعمال کیے جبکہ متعدد رضاکاروں نے سراغ کے لیے قریبی علاقوں کو چھان مارا تھا، گذشتہ ماہ پولیس نے کلیئو کی بازیابی سے متعلق معلومات دینے والے کے لیے سات لاکھ 50 ہزار امریکی ڈالر کی پیش کش کی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں