پاکستان اور ایران اسلامی اخوت کے رشتے میں بندھے ہوئے ہیں، گورنر سندھ -
The news is by your side.

Advertisement

پاکستان اور ایران اسلامی اخوت کے رشتے میں بندھے ہوئے ہیں، گورنر سندھ

کراچی: گورنرسندھ محمد زیبر نے کہا کہ پاکستان اور ایران اسلامی اخوت کے رشتے میں بندھے ہوئے ہیں،دونوں ممالک کے درمیان قریبی اوربرادرانہ تعلقات ہیں۔

تفصیلات کے مطابق گورنرسندھ محمد زیبر سے ایران کے نئے قونصل جنرل احمد محمدی کی ملاقات ہوئی، ملاقات میں سماجی شعبے کی ترقی میں ایران کے مزید تعاون سمیت دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

اس موقع پر گورنرسندھ محمد زیبر نے کہا کہ پاکستان اورایران اسلامی اخوت کے رشتےمیں بندھے ہوئے ہیں،دونوں ملکوں کے درمیان قریبی اوربرادرانہ تعلقات ہیں، قدرتی آفات میں ایران نے سب سے پہلے امدادی کام انجام دئیے ہیں۔

ملاقات میں ایرانی قونصل جنرل احمد محمدی نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایران کے عوام اور حکومت پاکستان کوبہت زیادہ ترجیح دیتے ہیں، سندھ کی ترقی کے لئےتعاون جاری رکھیں گے۔

واضح رہے کہ گذشتہ سال پاک ایران جوائنٹ بارڈر کمیشن کے انیسویں اجلاس کے موقع پر یہ حتمی فیصلہ کیا گیا تھا کہ دونوں ممالک اپنی سرزمین ایک دوسرے کے خلاف استعمال نہیں ہونے دیں گے۔

علاوہ ازیں پاکستان اورایران نے مختلف شعبوں میں تعاون بڑھانے کے لئے باہمی مفاہمت کی کئی یادداشتوں پردستخط کرکے اپنے تعلقات کو مزید استوار بھی کر رکھا ہے

پاکستان اورایران کے تعلقات کا مختصر پس منظر

یاد رہے کہ 1965 اور 1971 کی جنگوں میں ایران نے پاکستان کی بھرپور مدد کی جبکہ اقوام متحدہ کے فورم میں بھی ایران نے پاکستان کا ساتھ دیا، 1971 میں شاہِ ایران نے سقوط ڈھاکہ کے بعد پاکستان کا دورہ کرکے پاکستانی قوم کے دکھوں پر مرہم رکھنے کی کوشش کی۔

بنگلہ دیش کو بھی ایران نے اس وقت تسلیم کیا جب پاکستان نے اسے تسلیم کیا، اس کے علاوہ کشمیر کا مسئلہ جب بھی اقوام متحدہ میں پیش ہوا ہے، ایران نے ہمیشہ پاکستان کے موقف کی حمایت کی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں