The news is by your side.

Advertisement

کنگ سولومن مائنز: افریقا کی ایک مشہور مہمّاتی داستان

برطانوی مصنّف ہنری رائڈر ہیگرڈ کے اس ناول کا اردو ترجمہ گنجِ سلیمان کے عنوان سے کیا گیا

“کنگ سولومن مائنز” ایک مشہور مہماتی ناول ہے جسے مشہور برطانوی مصنّف ہنری رائڈر ہیگرڈ نے اپنے پُراسرار اور تحیّر پسند قلم سے لکھا تھا۔ یہ ناول 1885ء میں شایع ہوا تھا۔

اس ناول کی خاص بات یہ ہے کہ اسے مصنف نے افریقا کے ایک سفر کی داستان سے بُنا ہے، جسے اس زمانے میں‌ افریقا کی سرزمین کے پُراسرار واقعات کی پہلی تخیلاتی کاوش کہا گیا۔ تاہم اس ناول کے کرداروں‌ کی مہم افریقا کے نامعلوم مقامات تک محدود نہیں‌ بلکہ وہ دریائے یرموک کے قریب اور شمالی اردن اور شامی علاقوں تک بھی جاتے ہیں۔ اس مہم میں‌ شامل افراد کے سربراہ ایلن کواٹر مین تھے۔ یہ اپنے گروہ کے ایک ساتھی کے بھائی کی تلاش میں‌ نکلتے ہیں، جو ایک روز غائب ہوجاتا ہے۔

یہاں‌ ہم اپنے قارئین کو سر ہنری رائڈر ہیگرڈ کے بارے میں مختصراً بتاتے چلیں کہ یہ ناول نگار 1856ء میں پیدا ہوا اور 1925ء میں دنیا سے رخصت ہوا۔ انگریزی زبان کے اس ناول نگار کی وجہِ شہرت وہ داستانیں ہیں‌ جو مہم جوئی، اسرار و تحیّر کو اپنے تخیل کی گرفت میں‌ لیتی اور انوکھی یا نامعلوم دنیاؤں کی سیر کراتی ہیں۔

“کنگ سولومن مائنز” وہ ناول تھا جس کا اردو ترجمہ مظہر الحق علوی نے “گنجِ سلیمان” کے نام سے کیا تھا۔ ہندوستان کے اس معروف مترجم، افسانہ نگار اور ڈرامہ نویس نے انگریزی زبان کے اس ناول کو 1955ء میں اردو کے قالب میں‌ ڈھالا تھا۔

سر رائڈر ہیگرڈ کے متعدد ناولوں‌ کو غیر معمولی مقبولیت اور ان کے اسلوب کو زبردست پزیرائی حاصل ہوئی۔

برطانوی مصنف نے افریقا کی سیر و تفریح اور وہاں‌ قیام کے دوران اس برّاعظم کی تہذیب و تمدن کے ساتھ اس کے عجائب و اسرار کو کھوجتے ہوئے انھیں‌ اپنی کہانیوں‌ کا موضوع بنایا۔

رائڈر ہیگرڈ نے افریقا کو کئی ناولوں کا موضوع بنایا۔ “کنگ سولومن مائنز” وہ لازوال مہماتی داستان ہے جس کے اردو میں پانچ سے زائد ایڈیشن شایع ہوئے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں