The news is by your side.

Advertisement

سر کی چوٹ: عباسی شہید اسپتال کی انتظامیہ کا انوکھا فیصلہ

کراچی: شہر قائد میں واقع سرکاری اسپتال عباسی شہید کی انتظامیہ نے سر کی چوٹ کے مریض نہ لینے کا نوٹس جاری کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق عباسی شہید اسپتال کے میڈیکل آفیسر ڈاکٹر عمیر نے انتظامیہ کو ایک خط لکھ کر درخواست کی تھی کہ سر کی چوٹ لگے مریضوں کو عباسی اسپتال میں نہ لیا جائے۔

میڈیکو لیگل افسر سید عمیر احمد نے خط میں کہا تھا کہ ہمارے پاس نیورو سرجری اور رات میں سی ٹی اسکین کی سہولت میسر نہیں ہے، اس لیے ایدھی اور چھیپا سے کہا جائے کہ ایسے مریض ہمارے پاس نہ لائے جائیں۔

ایم ایل او ڈاکٹر عمیر کی جانب سے اس بات کی تصدیق کر دی گئی ہے کہ انھوں نے عباسی شہید اسپتال انتظامیہ کو مذکورہ تجویز پیش کی تھی۔

ڈاکٹر عمیر کا کہنا تھا کہ یہ تجویز انھوں نے 12 تاریخ کو نیورو سرجری کی سہولت نہ ہونے کی وجہ سے مرنے والے نوجوان عارف کے واقعے کے بعد دی۔

ایدھی کوآرڈینیٹر ڈاکٹر عبدالغفار نے بتایا کہ عباسی شہید اسپتال کی انتظامیہ نے سر کی چوٹ لگے نامعلوم افراد اسپتال لانے سے منع کر دیا ہے، چھیپا ویلفیئرکی جانب سے بھی عباسی اسپتال میں سر کی چوٹ لگے نا معلوم افراد نہ لانے کی ہدایت کی تصدیق کر دی گئی۔

عباسی شہید اسپتال کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ نے نوجوان عارف کے مرنے کے بعد 17 ستمبر کو جناح اسپتال انتظامیہ کو بھی ایک خط لکھ کر مطلع کیا تھا کہ عباسی اسپتال میں نیورو سرجری کا ڈیپارٹمنٹ غیر فعال ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں