خواجہ سعدرفیق اورسلمان رفیق کی گرفتاری کی وجوہات سامنے آگئیں
The news is by your side.

Advertisement

خواجہ سعدرفیق اورسلمان رفیق کی گرفتاری کی وجوہات سامنے آگئیں

لاہور : مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ سعدرفیق اور سلمان رفیق کی گرفتاری کی وجوہات منظر عام پر آگئیں ، نیب کا کہنا ہے کہ خواجہ سعدرفیق نے اپنے اختیارات کا غلط استعمال کیا اور شواہد کو ٹمپر کرنے کی کوشش بھی کی ، دونوں نےاپنےساتھیوں سےمل کرعوام کودھوکادیااوررقم بٹوری۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ سعدرفیق اور سلمان رفیق کی گرفتاری کی وجوہات سامنے آگئیں، نیب کا کہنا ہے کہ سعدرفیق نے اہلیہ،سلمان رفیق، ندیم ضیا، قیصر امین سے مل کر ایئرا یونیو سوسائٹی بنائی ، بعد ازاں ایئرا یونیو سوسائٹی کا نام تبدیل کرکے پیراگون رکھ لیا گیا۔

خواجہ سعدرفیق نےاپنےاختیارات کاغلط استعمال اور شواہدکوٹمپرکرنےکی کوشش بھی کی

نیب نے الزام لگایاہے کہ خواجہ برادران نےاپنےساتھیوں سےمل کرعوام کو دھوکا دیا اور رقم  بٹوری، سعدرفیق اورسلمان رفیق پیرا گون ہاوسنگ سوسائٹی سے فوائد حاصل کرتے رہے، خواجہ برادران کے نام پیراگون میں 40کنال اراضی موجود ہے۔

نیب کا مزید کہنا تھا کہ خواجہ سعدرفیق نےاپنےاختیارات کاغلط استعمال کیا اور شواہدکوٹمپرکرنےکی کوشش بھی کی جبکہ غیرقانونی ہاوسنگ سوسائٹی کی تشہیر کرکے عوام سےاربوں روپے بٹورے۔

مزید پڑھیں : نیب نے خواجہ سعد رفیق اور سلمان رفیق کو حراست میں لے لیا

یاد رہے لاہور ہائی کورٹ کی جانب سے خواجہ برادران کی عبوری ضمانت میں توسیع کی درخواست مسترد ہونے کے بعد نیب نے سابق وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق اور سابق وزیر صحت پنجاب خواجہ سلمان رفیق کو گرفتار کرلیا اور تفتیش کیلئے لاہور آفس میں منتقل کردیا ہے۔

سماعت میں وکلا صفائی نے دلائل میں کہا آج تک پیراگون کےساتھ ان کےموکلوں کاکوئی تعلق سامنےنہیں آیا،ایک ایک پیسہ قانونی ہے، جس پر نیب کےوکلا نے کہا سعد رفیق اور سلمان رفیق تفتیش میں تعاون نہیں کر رہے گرفتاری کے بغیر تفتیش مکمل نہیں کر پائیں گے۔

واضح رہے آشیانہ ہاؤسنگ سوسائٹی کی تحقیقات میں انکشاف ہوا تھا کہ وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کے پیراگون سوسائٹی سے براہ راست روابط ہیں، پنجاب لینڈ ڈویلپمنٹ کمپنی کے ذریعے آشیانہ اسکیم لانچ کی گئی تھی۔

بعد ازاں خواجہ برادران سے  الگ الگ قومی احتساب بیورو (نیب) کے افسران نے کی ایک گھنٹے پوچھ گچھ کی تھی، جس دوران وہ افسران کو مطمئن نہیں کرسکے تھے۔

خواجہ سعد رفیق اور ان کے بھائی نے ممکنہ گرفتاری سے بچنے کے لیے لاہور ہائیکورٹ میں درخواست بھی دائر کی تھی، خواجہ برادران پیراگون ہاؤسنگ اسکینڈل سمیت 3 مقدمات میں مطلوب تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں