The news is by your side.

Advertisement

امریکہ میں 20 ہزار سال قدیم جنگجوؤں کے لاشے دریافت

امریکی شہرکنساس کی ایک آرکیالوجیکل سائٹ پر انسانی تاریخ کی انتہائی اہم دریافت کی گئی ہے، کھدائی کے دوران متعدد جنگجوؤں کے تیروں سے چھلنی لاشے برآمد ہوئے ہیں جن کے بارے میں کہا جارہا ہے کہ یہ بیس ہزار سال قدیم اور انسانوں سے مختلف نوع کے ہیں۔

امریکی پروفیسر والٹرز کے مطابق انہوں نے امریکی شہر کانساز کے مقام پر ایک ایسی جگہ دریافت کی ہے جس کا تاریخ کی کتابوں میں کہیں ذکر موجود نہیں ہے۔

تفصیلات کے مطابق پروفیسر نے بتایا کہ انہوں نے امریکہ میں ایسی جگہ دریافت کی ہے، جس کے حوالے سے تاریخی کتابوں میں کہیں ذکر نہیں ملتا. انہوں نے مزید بتایا کہ اس دریافت کے حوالے سے ان کی ٹیم کافی عرصے سے تحقیقات کر رہی تھی۔ تیس ایکڑ کی اس زمین پر کھدائی کے دوران بڑی تعداد میں ڈھانچے اور ہڈیاں برآمد ہوئی ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ملنے والے ڈھانچوں میں سے کچھ کے جسموں اور کچھ کے سروں پر تیز دھار تیر پیوست ہوئے ہیں،ہر ڈھانچے میں تیروں کی تعداد مختلف ہے جب کے کچھ ڈھانچوں میں 5 تیر بھی پیوست ہے۔

والٹرز نے بتایا کہ ڈھانچوں کو دیکھ کر گماں ہوتا ہے کہ یہ تمام افراد دوران جنگ قتل کیے گئے تھے،ان تمام ڈھانچوں کی شکل انسانی ڈھانچوں سے مختلف اور ان کے سر کچھ مخصوص انداز کے معلوم ہوتے ہیں، جبکہ ڈھانچوں کی لمبائی عام انسانی قد سے بہت بڑی ہے۔

ایک مقام پر کچھ ڈھانچے بڑی تعداد میں گول دائرے کی صورت میں بیٹھے برآمد ہوئے ہیں، جس کو دیکھ کر اندازہ ہوتا ہے کہ ان کے اوپر کوئی بھاری چیز گرنے سے ان کی موت واقعہ ہوئی ہے، دیوقامد ڈھانچوں کے قریب مٹی کے برتن بھی موجود ہیں۔

واضح رہے امریکی پروفیسر کی یہ پہلی دریافت ہے، جو تاریخی حلقوں میں انتہائی اہمیت کی حامل قرار دی جارہی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں