The news is by your side.

Advertisement

کروناوائرس کتنا بھیانک ثابت ہوسکتا ہے؟ طبی ماہر نے خبردار کردیا

لندن: برطانوی طبی ماہر پروفیسر موٹگو میری نے خبردار کیا ہے کہ اب بھی کچھ لوگ کروناوائرس کو سنجیدہ نہیں لے رہے، مہلک وائرس دنیا کے لیے بہت بھیانک ثابت ہوسکتا ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق اپنے ایک انٹرویو میں پروفیسر کا کہنا تھا کہ لوگ کرونا کو ایک نزلے کی طرح کی بیماری تصور کررہے ہیں اور یہی سب سے بڑا مسئلہ ہے کہ شہری اسے سنجیدہ نہیں لے رہے۔

انہوں نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کئی اسے شہری بھی ہیں جن کے مطابق اگر وائرس ان میں منتقل ہوجائے تو کوئی مسئلے کی بات نہیں ہے۔ عوام کے سوچنے کا معیار بہت غلط ہے۔

موٹگومیری نے پیش گوئی کی ہے کہ مہلک وائرس لاکھوں لوگوں کو ہلاک کرسکتا ہے۔

طبی ماہر کا شہریوں کو ہدایت کرتے ہوئے کہنا تھا کہ خود کو بیمار محسوس کرنے کی صورت میں فوری طور پر اسپتال کا رخ کرنا لازمی ہے۔ برطانیہ میں زیادہ سے زیادہ وینٹی لیٹرز کروناوائرس سے لڑنے میں معاون ثابت ہوں گے۔

بڑی کامیابی ،چار مختلف تجرباتی دوائیوں سے کورونا وائرس کا آزمائشی علاج شروع

خیال رہے کہ دنیا بھر کے ممالک کی طرح برطانیہ بھی کروناوائرس سے شدید متاثر ہے اور مریضوں کی تعداد میں بھی اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔ البتہ حکومت عوام کو محفوظ رکھنے کے لیے ہرممکن اقدامات کررہی ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں