The news is by your side.

Advertisement

ایک یورپی ملک نے روس کا اہم مطالبہ مان لیا

ہنگری نے کہا ہے کہ وہ روسی گیس کیلیے روبل میں ادا کرنے کو تیار ہے جس سے یورپی یونین کے ساتھ تعلقات متاثر ہوسکتے ہیں۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق ہنگری کے وزیراعظم وکٹر اوربان نے نیوز کانفرنس میں کہا کہ ہنگری روسی گیس کی ادائیگی روبل میں کرے گا۔

اس سے قبل ہنگری کے وزیر خارجہ پیٹر سیجارتو کہا تھا کہ یورپی یونین کے حکام کا روس کے ساتھ گیس سپلائی کے معاہدے میں کوئی کردار نہیں ہے، جو ہنگری کی سرکاری ملکیت MVM اور Gazpormکے یونٹوں کے درمیان دو طرفہ معاہدے پر مبنی تھا۔

اس حوالے سے حکومتی ترجمان نے بھی یورپی کمیشن قومی حکام کے اعلانات پر تبصرہ کرنے سے انکار کردیا تھا۔

ہنگری ان چند یورپی یونین کے رکن ممالک میں سے ایک ہے جنہوں نے روس یوکرین تنازع کے جواب میں ماسکو کے خلاف توانائی کی پابندیوں کو مسترد کر دیا ہے، جسے روس نے “خصوصی فوجی آپریشن” قرار دیا ہے۔ ہنگری کے وزیر اعظم اوربان جن کی حکومت نے ایک دہائی سے زیادہ عرصے سے ماسکو کے ساتھ قریبی کاروباری تعلقات استوار کیے ہیں، اتوار کو ہونے والے انتخابات میں مسلسل چوتھی مدت کے لیے اقتدار میں آئے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں