ہفتہ, مئی 25, 2024
اشتہار

یہ وقت گزرجائے گا، لیکن یہ دھبہ ہمیشہ رہے گا، جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب ریمارکس دیتے ہوئے آبدیدہ

اشتہار

حیرت انگیز

اسلام آباد : اسلام آباد ہائی کورٹ نے عدالتی حکم کے باوجود شیریں مزاری کی گرفتاری کے خلاف درخواست پر آئی جی اسلام آباد کو نوٹس جاری کردیا، جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب نے ریمارکس دیئےیہ وقت گزرجائے گا، لیکن یہ دھبہ ہمیشہ رہے گا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ میں‌ پی ٹی آئی رہنما شیریں مزاری کی گرفتاری اور فریقین کیخلاف توہین عدالت کی درخواست پر سماعت ہوئی۔

اسلام آبادہائیکورٹ کےجسٹس میاں گل حسن اورنگزیب نے سماعت کی، دوران سماعت جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب نے ریمارکس دیئے کہ ججزٹاک شو میں نہیں جا سکتے، عدالت کےساتھ مذاق کیا جا رہا ہے، کیاوجہ ہےآئینی ادارے کے آرڈرزہوا میں اڑائے جارہے، اس سنگین معاملے پر اٹارنی جنرل ہائیر اتھارٹی کے ساتھ مشورہ کر لیں۔

- Advertisement -

اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب ریمارکس دیتے ہوئے آبدیدہ ہوگئے اور کہا یہ وقت گزرجائے گا، لیکن یہ دھبہ ہمیشہ رہےگا۔

جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب کا کہنا تھا کہ ہم یہاں خدمت کیلئےبیٹھےہیں، ہم جمہوریت میں رہ رہےہیں، اس کمپین سےواقف ہیں جو عدالتوں کیخلاف جاری ہے۔

جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ نے ریمارکس میں کہا کہ جوبھی ہواوہ پاکستان کےسیاہ باب کےطورپریادرکھاجائےگا، ہم ٹاک شومیں بیٹھ کرخود کو ڈیفنڈنہیں کرسکتے، عدالتی رٹ کیسے قائم رہ سکتی ہے۔

عدالت نے آئی جی اسلام آباد کو نوٹس جاری کرتے ہوئے کہا پیرتک بتائیں حکم کے باوجود شیریں مزاری کوپنجاب پولیس کے حوالے کیوں کیا گیا۔

Comments

اہم ترین

مزید خبریں