The news is by your side.

Advertisement

پی ٹی آئی فنڈنگ کیس : تحریک انصاف کو بڑا ریلیف مل گیا

اسلام آباد : اسلام آباد ہائی کورٹ نے پی ٹی آئی فنڈنگ کیس کا فیصلہ30دن میں کرنے کا حکم کالعدم قرار دے دیا اور کہا امید ہے الیکشن کمیشن انصاف کے تقاضے پر زیرالتواکیسز کو سنے گا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ نے پی ٹی آئی کی انٹراکورٹ اپیل پر فیصلہ سنادیا ، چیف جسٹس اطہر من اللہ اور جسٹس بابر ستار نے محفوظ شدہ فیصلہ سنایا۔

فیصلے میں پی ٹی آئی فنڈنگ کیس کا فیصلہ30دن میں کرنے کا حکم کالعدم قرار دیتے ہوئے کہا کہ توقع ہے الیکشن کمیشن دیگرپارٹیوں کے زیر التوا کیسز مناسب وقت میں مکمل کرے گا۔

عدالت کا کہنا تھا کہ امید ہےالیکشن کمیشن انصاف کے تقاضے پر زیرالتواکیسز کو سنے گا، شک کی گنجائش نہیں کہ تمام جماعتوں سے ایک جیسابرتاؤ ہوگا۔

فیصلے میں کہا گیا کہ عدالت امید کرتی ہے کہ کارروائی شفاف انداز میں آگے بڑھائی جائے گی، الیکشن کمیشن نے ابھی تک کوئی آرڈر پاس نہیں کیا، الیکشن کمیشن نمائندے نے یقین دہانی کرائی بلاتفریق کارروائی آگےبڑھے گی۔

حکم نامے میں کہا کہ سیاسی جماعتوں کیخلاف روزانہ کارروائی کے لیے مزید ہدایت بھی مانگی گئی ہے، الیکشن کمیشن نمائندے نے کہا کارروائی پولیٹیکل پارٹیز آرڈر 2002 کےتحت ہے، اپیل کنندہ کیخلاف کارروائی2014 سے زیرالتواہے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کا کہنا تھا کہ دیگر سیاسی جماعتوں کے خلاف کارروائی بعد میں شروع کی گئی ہے، اسٹیٹ بنک سے دیگر 3جماعتوں کے بارے میں معلومات طلب کی گئی ہیں۔

عدالت نےتمام جماعتوں کی ممنوعہ فنڈنگ تحقیقات ایک ساتھ کرنےکی درخواست نمٹادی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں