The news is by your side.

Advertisement

بھارت میں دل دہلا دینے والا واقعہ، بچوں کو پولیو قطروں کی جگہ سینیٹائزر پلا دیا گیا

ممبئی: بھارتی ریاست مہاراشٹر میں بچوں کو پولیو کے قطروں کی جگہ سینیٹائزر کے قطرے پلا دیے گئے، جس سے بچوں کی طبیعت خراب ہو گئی اور انھیں اسپتال منتقل کرنا پڑا۔

تفصیلات کے مطابق مہاراشٹر کے یَوَتمال میں مجرمانہ غلطی کا واقعہ پیش آیا ہے، جہاں 5 برس سے کم عمر کے 12 بچوں کو پولیو ڈراپ کی جگہ سینیٹائزر پلایا گیا۔

ضلع یَوَتمال کے ایک افسر نے میڈیا کو تصدیقی بیان دیا کہ بارہ بچوں کو سینیٹائزر کے قطرے پلا دیے گئے تھے، جس پر ان کی طبیعت خراب ہو گئی، تاہم اب اسپتال میں ان کی حالت بہتر ہے۔

ڈسٹرکٹ کونسل چیف ایگزیکٹو افسر نے بتایا کہ مجرمانہ غفلت کے لیے ذمہ دار 3 ہیلتھ ورکرز کو معطل کر کے ان کے خلاف تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ جب پولیو ورکرز نے ایک گاؤں کے پرائمری ہیلتھ سینٹر میں بچوں کو سینیٹائزر کی دو دو بوندیں پلا دیں تو کچھ دیر بعد ان کی طبیعت بگڑنے لگی اور وہ الٹیاں کرنے لگے، جس پر انھیں سرکاری اسپتال لے جایا گیا، معاملہ سامنے آنے کے بعد ضلعی افسر نے تحقیقات کا حکم جاری کیا۔

ضلع کے افسر کا کہنا تھا کہ ابتدائی معلومات کے مطابق واقعے کے وقت ہیلتھ سینٹر میں ایک ڈاکٹر، اور دو دیگر ہیلتھ ورکرز موجود تھے۔

خیال رہے کہ بھارتی صدر رام ناتھ کوند کے حکم پر 30 جنوری سے پولیو مہم کا آغاز کیا گیا ہے، جس کے بعد یہ واقعہ پیش آیا، دوسری طرف مرکزی وزارت صحت کا کہنا ہے کہ بھارت ایک دہائی سے پولیو سے پاک ہے اور پولیو وائرس کا آخری کیس 13 جنوری 2011 کو درج ہوا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں