The news is by your side.

Advertisement

سول انجینئر سبزی فروشی کی آڑ میں کیا کرتا رہا؟ پولیس بھی حیران

ممبئی : بھارت میں ایک تعلیم یافتہ شخص دنیا کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کیلئے سبزی فروش بن گیا اور اس کی آڑ میں اپنا گھناؤنا کاروبار جاری رکھا۔

ممبئی کے مضافات میں تاناجی نگر کے کرار گاؤں کا رہائشی28سالہ ملزم سچن سالونکھے ایک ادارے میں بحیثیت سول انجینئر ملازمت کرتا تھا، جسے کورونا لاک ڈاؤن کے دوران نوکری سے برخاست کردیا گیا تھا۔

ملازمت سے فارغ ہونے کے بعد ملزم نے سبزی فروشی کا کام شروع کیا لیکن وہ لوگوں کو دکھانے کیلئے تھا جبکہ حقیقت میں وہ منشیات فروشی کا گھناؤنا کاروبار کررہا تھا۔

اس کے گھر سے تھوڑے فاصلے پر ہی ایک سبزیوں کے گودام میں سبزیاں رکھا کرتا تھا، اس کی مشکوک نقل وحرکت دیکھ کر پولیس نے شک کی بنیاد پر اس کے گودام کی تلاشی لی تو وہاں پیاز کی بوریوں میں بھاری تعداد میں گانجہ برآمد ہوا۔

ممبئی پولیس نے چھاپہ کے دوران گودام سے3بوری گانجہ کی کھیپ برآمد کی جس میں مجموعی طور پر63 کلوگرام گانجہ موجود تھا۔ مارکیٹ میں اس کی قیمت 9 لاکھ 45 ہزار روپے ہے۔

پولیس نے ملزم سچن سالونکھے کو گرفتار کے مقدمہ درج کرلیا جسے بعد ازاں عدالت میں پیش کیا گیا جہاں عدالت نے اسے ریمانڈ پر پولیس تحویل میں دے دیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں