The news is by your side.

Advertisement

کوچ کی اہلیہ کی جانب سے ہراساں کیے جانے پر بھارتی کھلاڑی کا اقدام خودکشی

نئی دہلی: بھارتی ایتھلیٹس نے کوچ کی اہلیہ کی جانب سے ہراساں کیے جانے کے بعد اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا، یمنی کوچ کی اہلیہ کو پولیس نے حراست میں لے لیا۔

خلیج ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق بھارتی ریاست اترپردیش میں یمنی کوچ کی اہلیہ کی جانب سے مبینہ طور پر ہراساں کیے جانے پر بیڈ منٹن کی بھارتی خاتون کھلاڑی نے گلے میں پھندا لگا کر اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا، کوچ کی اہلیہ کو پولیس نے گرفتار کرلیا۔

بھارتی خاتون کھلاڑی گزشتہ ایک سال سے اسپورٹس انسٹی ٹیوٹ ایٹاوا میں تربیت حاصل کررہی تھی، خاتون نے خودکشی سے قبل ایک نوٹ لکھا جو کوچ کی اہلیہ سدھارتھا کی گرفتاری کا سبب بنا۔

پولیس کے مطابق خاتون نے خودکشی سے قبل لکھے گئے نوٹ میں کہا کہ مجھے جینے کا کوئی حق نہیں ہے، 13 سالہ سلونی نے خودکشی کے لیے ٹائی اور دوپٹے کا استعمال کیا۔

سلونی نے خودکشی نہیں کی اس کو قتل کیا گیا ہے

والد وجے کمار

سلونی کے والد وجے کمار کا کہنا ہے کہ مجھے یقین نہیں آرہا کہ میری بیٹی نے انتہائی قدم کیوں اُٹھایا ہے۔

وجے کمار کا کہنا تھا کہ کمرے کی دیوار 16 فٹ بلند ہے وہ پنکھے تک خود نہیں پہنچ سکتی تھی، انہوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ سلونی نے خودکشی نہیں کی ہے ہوسکتا ہے اس کا قتل کیا گیا ہے اور خودکشی کا رنگ دینے کی کوشش کی گئی ہو۔

سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس سنتوش مشرا کا کہنا ہے کہ 13 سالہ بیڈمنٹن کھلاڑی سلونی کے اہل خانہ کی جانب سے واقعے کی کوئی ایف آر درج نہیں کرائی گئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ یمنی خاتون کو حراست میں لے کر آئی پی سی 306 کے تحت مقدمہ درج کرلیا گیا ہے، فرانزک رپورٹ کو بھی چارج شیٹ کا حصہ بنایا جائے گا۔

اترپردیش کے وزیر کھیل چیتن چوہان نے واقعے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اسپورٹس ڈائریکٹوریٹ سے واقعے کی تفصیلات طلب کرلی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں