The news is by your side.

Advertisement

بھارت میں مسلم چوڑی فروش پر تشدد کی ویڈیو وائرل

نئی دہلی : بھارت میں ہندو انتہا پسندوں نے ہندو توا کے نام پر چوڑیاں فروخت کرنے والے غریب مسلم نوجوان کو سرعام وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔

نریندر مودی کے اقتدار سنبھالنے کے بعد سے بھارت میں مسلم کشی اور ہندو انتہا پسندی کے واقعات میں تیزی سے اضافہ ہوا جو تھمنے کا نام ہی نہیں لے رہا، مسلمان پر تشدد کا تازہ واقعہ بھارتی کی ریاست مدھیہ پردیش میں رونما ہوا جہاں چار سے پانچ افراد پر مشتمل ایک گروہ نے مبینہ طور پر جھوٹا ہندو نام رکھنے کے الزام میں نوجوان بری طرح پیٹ ڈالا۔

مدھیہ پردیش کے شہر اندور میں مسلمان نوجوان کو بلاجواز سرعام تشدد کا نشانہ بنایا گیا ہے، جس کی ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر بہت زیادہ وائرل ہورہی ہے۔

واقعے کی ایف آئی آر تھانے میں درج ہوئی پولیس نے فوری کارروائی کرتے ہوئے دو ملزمان کو گرفتار کرلیا تاہم تین اب بھی فرار ہیں۔

ریاستی حکام کا کہنا ہے کہ متاثرہ نوجوان نے اپنا جعلی ہندو نام رکھا ہوا ہے تاکہ کوئی اسے پریشان نہ کرے اور دو جعلی آدھار کارڈ بھ بنا رکھے تھے۔

واضح رہے کہ اس قبل بھی بھارت میں مسلمان نوجوانوں، بزرگوں اور بچوں پر ہندو انتہا پسندوں کے تشدد اور قتل کے واقعات سامنے آتے رہے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں