The news is by your side.

Advertisement

تیل کی برآمد پر پابندیوں سے ایران کو سالانہ 50 ارب ڈالرز کا خسارہ ہوگا: امریکا

واشنگٹن: امریکا کے خصوصی ایلچی برائے ایران برائن ہک نے دعویٰ کیا ہے کہ ایران سے بیک ڈورچینل رابطہ نہیں ہے۔

اپنے ایک انٹرویو میں برائن ہک کا کہنا تھا کہ تیل کی برآمد پر پابندیوں سے ایران کو سالانہ 50 ارب ڈالرز کا خسارہ ہو گا، ڈونلڈ ٹرمپ ایران کو دباؤ میں لانے کے لیے جاری ہماری مہم سے مطمئن ہیں اور بہت خوش بھی ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق برائن ہک نے واضح کیا کہ ایران کے پیٹرو کیمکل شعبے، فولادی صنعت اور قیمتی دھاتوں کو بھی پابندیوں کی زد میں رکھا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ایران پر مزید دباؤ بڑھایا جائے گا جسے تہران برداشت نہیں کرسکے گا۔ ایک سوال پر امریکی ایلچی نے بتایا کہ امریکا 2015 میں ہونے والے جوہری معاہدے سے بہتر معاہدہ سامنے لانے کی کوشش کرے گا لیکن امریکی انتظامیہ ایرانی حکومت کو اربوں ڈالرز کی آمدن سے محروم کرے بہت زیادہ خوش ہے۔

ایران یورینیم افزودگی روک دے، یورپی یونین نے خبردار کردیا

امریکا کے خصوصی ایلچی برائن ہک نے کہا کہ ایران ماضی میں کئی مرتبہ سفارتکاری کی کوششیں مسترد کرچکا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ایران اپنا رویہ تبدیل کرے اور اپنی مہلک پراکسیز کی معاونت بند کرے۔

انہوں نے واضح کیا کہ ہمسایوں کو روز روز دی جانے والی دھمکیوں کا سلسلہ کسی طور قبول نہیں ہے۔ ایران کے لیے امریکہ کے خصوصی ایلچی برائن ہک نے ایک سوال کے جواب میں واضح کیا کہ ہم پہلی مرتبہ ایرانی حکومت کو ناں کہہ رہے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں