The news is by your side.

Advertisement

امریکی افواج کا انخلاء ایرانی فوجیں پورا کریں گی، ترکی الفیصل

امریکا سے اپنی فوجیں واپس بلانے کے فیصلے پر نظر ثانی کرنی چاہیے

ریاض : سعودی شہزادہ ترکی الفیصل کا کہنا ہے کہ شام سے امریکی افواج کے انخلاء کے بعد مشرق وسطیٰ میں ایران کی مداخلت مزید بڑھ جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق سعودی عرب کی خفیہ ایجنسی کے سربراہ شہزادہ ترکی الفیصل کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ شام سے امریکی افواج کے انخلاء کے بعد خطے میں ایک خلا پیدا ہوجائے گا جسے ایران پورا کرے گا۔

ترکی الفیصل کا کہنا تھا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ شام سے امریکی افواج کی واپسی کے فیصلے پر نظر ثانی کریں، ایک طرف امریکا کہتا ہے کہ شام سے ایران کو نکال رہے ہیں جبکہ دوسری طرف خود اپنی افواج واپس بلا رہا ہے، امریکی افواج کے نکلتے ہی شام میں ایرانی فوجیں موجود ہوں گی۔

سعودی خفیہ ایجنسی کے سربراہ کا کہنا تھا کہ عرب ریاستوں بشار الااسد پر بھروسہ نہیں کرنا چاہیے کیوں بشار الااسد ایران سے دستبردار نہیں ہوگا۔

امریکی افواج کے انخلاء کے بعد شام میں ایک خلاء پیدا ہوگا جسے اگلے ہی روز ایرانی فورسز پورا کردیں گی

شہزادہ ترکی الفیصل سربراہ سعودی خفیہ ایجنسی

شہزادہ ترکی الفیصل کا کہنا تھا کہ شامی حکومت نے شامی شہریوں کے معیار زندگی کو بہتر بنانے کے بجائے انہیں ظلم و تشدد کا نشانہ بنایا اور ایران کی مدد سے انہیں دربدر کردیا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ’عرب حکومتوں یہ سوچنا بھی نہیں چاہیے کہ روس شام پر ایران کی مداخلت کم کرنے کےلیے دباؤ ڈالے گا کیوں کہ گزشتہ تین برسوں میں شامل میں ایرانی مداخلت میں اضافہ ہی ہوا ہے۔

مزید پڑھیں: صدر ٹرمپ نے شام سے امریکی فوج واپس بلانے کا اعلان کردیا

یاد رہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے 19 دسمبر کو اعلان کیا تھا کہ ہم نے داعش کو شکست دے دی، اور آئندہ 30 دنوں میں امریکی فورسز شام سے نکل جائیں گی۔

مزید پڑھیں : صدر ٹرمپ سے اختلافات، امریکی وزیر دفاع مستعفی ہوگئے

شام سے امریکی فوج کے انخلا سے متعلق ٹرمپ کے بیان پر امریکی وزیر دفاع جیمزمیٹس اور دولت اسلامیہ مخالف اتحاد کے خصوصی ایلچی بریٹ میکگرک نے ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔

خیال رہے کہ داعش کے خلاف شام میں صدر باراک اوبامہ نے پہلی مرتبہ سنہ 2014 میں فضائی حملوں کا آغاز کیا تھا اور 2015 کے اواخر میں اپنے 50 فوجی بھیج کر باضابطہ شام کی خانہ جنگی میں حصّہ لیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں