The news is by your side.

Advertisement

اسلام آباد پولیس نے 9 ماہ میں 8 ہزار سے زائد ملزمان گرفتار کر لیے

اسلام آباد: وفاقی دارالحکومت کی پولیس نے 9 ماہ کی کارکردگی رپورٹ جاری کر دی، اس دوران مختلف جرائم میں ملوث 8623 ملزمان کو گرفتار کیا گیا۔

اسلام آباد پولیس کے ترجمان کے مطابق نو ماہ کے دوران آٹھ ہزار سے زاید ملزمان کو گرفتار کیا گیا، جن میں میں 1084 اشتہاری ملزمان بھی شامل ہیں۔

ملزمان سے کروڑوں کا مال مسروقہ بھی برآمد کیا گیا، ڈکیتیوں اور سرقہ بالجبر کے 512 ملزمان گرفتار کیے گئے، نقب زنی اور چوری میں ملوث 582 ملزمان گرفتار کیے گئے۔

ترجمان کے مطابق 109 کار چور گرفتار کیے گئے اور ان سے 131 گاڑیاں برآمد کی گئیں، موٹر سائیکل چوری میں بھی ملوث 168 ملزمان کو گرفتار کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:  منشیات اسمگلروں کے خلاف کارروائی، اے این پی رہنما کے بیٹوں سمیت 6 گرفتار

پولیس ترجمان نے بتایا کہ منشیات اور شراب فروشوں کے خلاف بھی مؤثر کریک ڈاؤن کیا گیا، جس میں 1070 منشیات و شراب فروشوں کو گرفتار کیا گیا، اور 314 کلو چرس، 41 کلو ہیروئن، 7 کلو سے زاید افیون برآمد کیا گیا۔

یاد رہے کہ رواں ماہ اسلام آباد میں اینٹی نارکوٹکس فورس (اے این ایف) نے منشیات کے اسمگلروں کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے اے این پی رہنما کے بیٹوں سمیت 6 ملزمان گرفتار کر لیے تھے۔

ملزمان کو 3 گاڑیوں میں منشیا ت کے ساتھ گرفتار کیا گیا تھا، یہ کارروائی موٹر وے ٹول پلازہ کے قریب خفیہ اطلاع پر کی گئی تھی۔

ذرایع نے بتایا تھا کہ کارروائی میں ضلع خیبر کے اے این پی رہنما عمران آفریدی کے 2 بیٹے کامران اور عرفان کو گرفتار کیا گیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں