The news is by your side.

Advertisement

کرونا وائرس : جرمنی سے اٹلی جانے والا طیارہ فضائی حدود سے واپس

برلن : جرمنی سے اٹلی جانے والی پرواز ایئرپورٹ تک رسائی نہ ملنے پر وطن واپس آگئی، جہاز اٹلی کی فضائی حدود میں داخل ہوا تو کپتان کو بتایا گیا کہ ہوائی اڈے کو بند کردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کورونا وائرس کی تباہ کاریوں کے باعث دنیا بھر میں دیگر معاشی سرگرمیوں کے ساتھ ساتھ فضائی آپریشن بھی متاثر ہیں، جس کے باعث مسافروں کو بہت سے مسائل کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق جرمنی کے شہر سلڈورف سے روانہ ہونے والی پرواز ای ڈبلیو 9844 نے اٹلی جانے کیلئے ایئر پورٹ سے اڑان بھری، ایئر بس اے 320صرف دو مسافروں کو لے کر جارہا تھا لیکن طیارے کو چار گھنٹے اور دس منٹ کی مسافت طے کرنے کے بعد واپس اسی جگہ اترنا پڑا جہاں سے وہ روانہ ہو اتھا۔

جرمن کیریئر یوروونگ نے اس بات کی تصدیق کی کہ ہفتے کے روز اٹلی جانے والی پرواز جسے اولبیا ہوائی اڈے پر اترنا تھا، ہوائی جہاز جیسے ہی اٹلی کی فضائی حدود میں داخل ہوا تو عملے کو ایئر ٹریفک کنٹرولر کی جانب سے اطلاع دی گئی کہ اس کا مطلوبہ ایئر پورٹ آپریشن کیلئے بند ہے۔

جس کے باعث وہ اپنا طیارہ ایئر پورٹ پر نہیں اتار سکتا، جس پر کپتان نے جہاز کا رخ واپس جرمنی کی جانب موڑ لیا اور یوں چار گھنٹے اور دس منٹ بعد طیارہ اسی ایئر پورٹ پر لینڈ کرگیا جہاں سے وہ روانہ ہوا تھا۔ یوروونگ کے ترجمان نے بتایا کہ واقعہ ایک غلط فہمی کا نتیجہ ہے۔

واضح رہے کہ اٹلی کی وزارت انفراسٹرکچر اینڈ ٹرانسپورٹیشن کی جانب سے 17 مئی کو اولبیا ایئرپورٹ کو دوبارہ کھولنے کا حکم دیا گیا تھا لیکن اسی فیصلے کو اسی دن سول ایوی ایشن اتھارٹی نے مسترد کردیا، ایئر پورٹ کو فی الحال دو جون تک مزید بند رہنے کا کہا گیا ہے۔

مزید پڑھیں: اٹلی، لاک ڈاؤن میں نرمی، سفری پابندیاں ختم

اٹلی دنیا کا وہ تیسرا بڑا ملک ہے جہاں سب سے زیادہ اموات ہوئیں، اب تک مجموعی طور پر 31 ہزار  600 سے زائد اموات کی تصدیق کی جاچکی ہے جو کہ امریکا اور برطانیہ کے بعد سب سے زیادہ اموات ہیں۔

اس سے قبل وزیر اعظم نے لاک ڈاؤن کے مثبت اثرات سامنے آنے کے بعد عوام کو خوش خبری سناتے ہوئے ملک بھر میں 4 مئی کے بعد سے لاک ڈاؤن میں نرمی کا اعلان کیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں