The news is by your side.

Advertisement

جاپان میں کرونا وائرس کے علاج کے لیے دوا کی منظوری

ٹوکیو:جاپان نے اینٹی وائرل دوا ریمیڈی سیور کو کرونا کے مریضوں کے علاج کے لیے استعمال کرنے کی منظوری دے دی۔

تفصیلات کے مطابق جاپان نے ریمیڈی سیور کو کرونا وائرس کے علاج کے لیے استعمال کی اجازت دی ہے اور یہ کرونا مریضوں کے علاج کے لیے جاپان کی پہلی منظور کردہ دوا ہے۔ ریمیڈی سیور وائرس کے جین میں شامل ہو کر اس کے پھیلنے کے عمل کو متاثر کرتی ہے۔

امریکا کے بعد جاپان ریمیڈی سیور کو کرونا مریضوں کے علاج کے استعمال کے منظور کرنے والا دوسرا ملک بن گیا ہے، اس سے قبل امریکی فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن نے اس کے استعمال کی منظوری دی تھی۔

جاپان میں 16 ہزار سے زائد کرونا سے متاثرہ افراد ہیں اور 800 سے کم اموات ہیں جبکہ دیگر صنعتی ممالک کے مقابلے میں جاپان میں کم کسیز رپورٹ ہوئے ہیں۔

یاد رہے کہ کورونا وائرس کا اب تک کوئی مستند علاج موجود نہیں اور یہ منظوری عارضی طور پر دی گئی ہے تاکہ مریضوں اور معالجین کو ریلیف فراہم کیا جائے اور اسپتال مریضوں سے نہ بھر جائیں۔

اس سے قبل جاپان کے وزیراعظم آبے شنزو نے کرونا وائرس کی وجہ سے ملک گیر ہنگامی حالت میں 31 مئی تک توسیع کی تھی۔جاپان کے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ اگر صورت حال بہتر ہوگی تو یہ ہنگامی حالت مذکورہ تاریخ سے قبل بھی ختم کی جاسکتی ہے۔

آبے شنزو کا کہنا تھا کہ کرونا وائرس کے مریضوں کی تعداد کم ہو کر پہلے کے مقابلے میں ایک تہائی ہوگئی۔جاپان کے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ حکومت کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو قابو میں لانے کے لیے درست سمت پر ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں