The news is by your side.

Advertisement

جاپان کی تاریخ کا خطرناک سمندری طوفان، ہلاکتوں کی تعداد 58 ہوگئی

ٹوکیو: جاپان کی تاریخ کے خطرناک سمندری طوفان نے تباہی مچادی، دو دن کے دوران ہلاک افراد کی تعداد 58 ہوگئی۔

تفصیلات کے مطابق سمندری طوفان ہیگی کے جاپان کے ساحلی علاقوں سے ٹکرا نے کے باعث ہلاکتوں کی تعداد 58 ہوگئی، جبکہ درجنوں تاحال لاپتہ ہیں۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق طوفان کے باعث کئی پروازیں منسوخ ہوچکی ہیں اور ڈیڑھ لاکھ گھروں کو بجلی کی فراہمی بھی معطل ہے۔

سمندری طوفان ہیگی کی تباہ کاریوں کے باعث جاپان اور اسکاٹ لینڈ کے درمیان منعقد ہونے والے رگبی کے عالمی کپ کے تین میچز بھی منسوخ ہوچکے ہیں۔

سیلاب اور لینڈ سلائیڈنگ سے متاثر ہونے والے افراد کو ریسکیو کرنے کےلیے ہزاروں کی تعداد میں پولیس افسران، فائر فائیٹرز، کوسٹ گارڈز اور ملٹری اہلکار ریلیف آپریشن میں حصّہ لے رہے ہیں۔

سمندری طوفان ہیگی نے 37 افراد کی جان لے لی، 20 لاپتہ

غیر ملکی خبررساں ادارے کا کہنا ہے کہ 92 ہزار گھر اب بھی بجلی سے محروم ہیں جبکہ 70 لاکھ سے زائد افراد طوفان کے باعث اپنے گھروں کو چھوڑ کر محفوظ مقام پر منتقل ہوگئے جبکہ شیلٹر ہومز میں صرف 50 ہزار افراد موجود ہیں۔

خیال رہے کہ حکام نے خطرات کے پیش نظر علاقوں میں احتیاطی ہدایت جاری کردی ہیں جبکہ طوفان کے ٹکرانے سے قبل ہی شہریوں کی جانب سے اشیائے خوردونوش ذخیرہ کرلی گئی تھیں جس کے سبب مارکیٹوں میں سامان کی قلت پیدا ہوگئی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں