The news is by your side.

Advertisement

کینگروز کے سیاحوں پر حملے، انتظامیہ پریشان

سڈںی: مشرقی آسٹریلیا میں کینگرو سیاحوں کی جانب سے دی جانے والی خوراک کے اتنے عادی ہوگئے ہیں کہ اگر سیاح انہیں گاجر، برگر، چپس نہ دیں تو حملہ کرکے ان کی خوراک چھین لیتے ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق آسٹریلیا کے دارالحکومت سڈنی کے شمال کی جانب واقع ایک سیاحتی مقام میں سیاحوں پر کینگروز کے حملوں کے واقعات پیش آئے ہیں۔

انتظامیہ کی جانب سے سیاحوں کو خبردار کیا گیا ہے کہ جانور کے ساتھ سیلفی لینے کے شوق میں بہت سے سیاح انہیں خوراک پیش کرتے ہیں جو کہ آسٹریلیا میں غیر قانونی ہے۔

سڈںی کے پارک میں جانوروں کی دیکھ بھال کے لیے تعینات ایک اہلکار کا کہنا ہے کہ جب ایک جانور کو ایک سو بار گاجر دی گئی ہو تو وہ جب گاجر دیکھے گا تو اسے دیکھ کر زبردستی چھینے گا اورنہ دینے کی صورت میں سیاح کو لات مار سکتا ہے یا پھر انہیں دھکا دے سکتا ہے۔

سیاحوں کے لیے مقامی اسٹیشن سے ہسپتال تک شٹل سروس چلانے والے شین لیوس کے مطابق لوگوں کو باقاعدگی سے کینگروز کے حملوں کا سامنا ہے، میں نے لوگوں کو کینگروز کو برگر، چپس اور دلیا کھلاتے ہوئے دیکھا ہے اور اب کچھ ایسے کھانے ہیں جنہیں پانے کے لیے کینگرو حملہ کرسکتا ہے۔

مقامی اسمبلی کے رکن گریک کا کہنا ہے کہ سیاح کینگروز کو بہت پسند کرتے ہیں، لیکن یہ جنگلی جانور ہیں جن کے لمبے اور نوکیلے ناخن ہیں اور اب وہ لوگوں کو تواتر سے زخمی کررہے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں