The news is by your side.

Advertisement

طیارہ حادثہ، لواحقین 36 لاشیں بغیر شناخت لے گئے

35لاشیں قابل شناخت اور30 ناقابل شناخت ہیں ،ترجمان پی آئی اے

کراچی: پی آئی اے طیارہ حادثے میں جاں بحق ہونے والے مسافروں کے لواحقین اپنے پیاروں کی لاشیں بغیر تصدیق مردہ خانوں سے زبردستی لے جانے پر مجبور ہوگئے۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق کراچی طیارہ حادثے میں جاں بحق ہونے والے 36 مسافروں کے لواحقین بغیر شناخت کے لاشیں لے گئے، ایدھی فاؤنڈیشن کے سربراہ فیصل ایدھی نے لاشیں بغیر شناخت لے جانے کا دعویٰ کیا ہے۔

فیصل ایدھی نے بی بی سی سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ لواحقین اجازت نامے کے بغیر زبردستی لاشیں لے جارہے ہیں جن کی ابھی تک شناخت نہیں ہوئی ہے۔

ایدھی فاؤنڈیشن کے سربراہ نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ورثا مردہ خانے میں ہنگامہ مچاتے ہیں اور اپنے طور پر شناخت کرکے لاش لے جاتے ہیں۔

دوسری جانب حکومت سندھ کی جانب سے اس معاملے پر لاعلمی کا اظہار کیا گیا ہے۔

94 لاشیں مکمل، 3 باقیات کی صورت ملیں، ترجمان پی آئی اے

علاوہ ازیں پی آئی اے کا کہنا ہے کہ طیارہ حادثے میں جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 97 ہے، ملنے والی لاشوں میں 94 مکمل، 3 باقیات کی صورت ملیں، 35 لاشیں قابل شناخت اور 30 ناقابل شناخت ہیں۔

ترجمان کے مطابق پی آئی اے نے لواحقین کو چار انٹرنیشنل، 37 ڈومیسٹک ٹکٹیں جاری کیں، اب تک 4 میتیں لاہور اور 3 اسلام آباد پہنچائی جاچکی ہیں، مجموعی طور پر 51 میتیں ورثا کے حوالے کردی گئی ہیں۔

پی آئی اے کے ترجمان کا کہنا تھا کہ 32 لواحقین، متاثرہ بے گھر13 افراد کو ہوٹل میں 21 کمرے الاٹ کیے گئے ہیں، جناح اسپتال میں 66 اور سول اسپتال میں 31 لاشیں لائی گئیں، ایدھی کولڈ اسٹوریج میں 56، چھیپا میں 41 میتیں رکھوائی گئیں۔

مزید پڑھیں: طیارہ حادثہ، خاتون کی تلاش میں اہلخانہ جائے حادثہ پہنچ گئے، رقت آمیز مناظر

واضح رہے کہ طیارہ حادثے کے نتیجے میں 97 مسافر جاں بحق ہوگئے تھے جبکہ 2 مسافر معجزانہ طور پر بچ گئے تھے، جاں بحق مسافروں کی لاشیں لواحقین کے حوالے کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں