عالمی عدالت انصاف: کلبھوشن کیس آئندہ برس فروری میں سماعت کے لیے مقرر -
The news is by your side.

Advertisement

عالمی عدالت انصاف: کلبھوشن کیس آئندہ برس فروری میں سماعت کے لیے مقرر

دی ہیگ: عالمی عدالت انصاف میں بھارتی جاسوس کلبھوشن کے کیس کو سماعت کے لیے مقرر کردیا گیا۔ کلبھوشن کیس کی سماعت آئندہ سال فروری میں ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق ذرائع کا کہنا ہے کہ عالمی عدالت انصاف میں بھارتی جاسوس کلبھوشن کے کیس کو سماعت کے لیے مقرر کرتے ہوئے کیس کی سماعت آئندہ سال فروری میں کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق عالمی عدالت میں فروری میں ایک ہفتہ روزانہ کی بنیاد پر سماعت ہوگی۔ عالمی عدالت میں پاکستان اور بھارت کی جانب سے 2، 2 جوابات جمع کروائے گئے تھے۔

پاکستان نے جوابات میں بھارت کے تمام اعتراضات کے جواب دیے تھے۔ پاکستان نے پہلا جواب 13 دسمبر 2017 اور دوسرا رواں سال 17 جولائی کو جمع کروایا تھا۔

خیال رہے کہ 3 مارچ 2016 کو حساس اداروں نے بلوچستان سے بھارتی جاسوس اور نیوی کے حاضر سروس افسر کلبھوشن یادیو کو گرفتار کیا تھا۔ بھارتی دہشت گرد کلبھوشن پاکستان میں دہشت گرد کارروائیوں میں ملوث تھا۔

اگلے برس 10 اپریل کو پاکستان کی جاسوسی اور کراچی اور بلوچستان میں تخریبی کارروائیوں میں ملوث ہونے کے جرم میں پاکستان آرمی ایکٹ کے تحت کلبھوشن کو سزائے موت سنائی گئی تھی۔

اس سے قبل فیلڈ جنرل کورٹ مارشل میں بھارتی دہشت گرد کلبھوشن کا ٹرائل بھی کیا گیا۔

مزید پڑھیں: بلوچستان میں بدامنی میں افغان انٹیلی جنس ملوث تھی

بعد ازاں بھارت اس معاملے کو عالمی عدالت میں لے گیا، بھارت نے عالمی عدالت میں کلبھوشن کی پھانسی کے خلاف اپیل دائر کی تھی تاہم عالمی عدالت انصاف نے کلبھوشن کیس میں اپنا فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ بھارت عالمی عدالت کو کیس کے میرٹ پر مطمئن نہیں کر پایا۔

فیصلے میں کہا گیا کہ پاکستان بھارت کو کلبھوشن تک قونصلر رسائی دے اور امید ہے کہ پاکستان عالمی عدالت کا مکمل فیصلہ آنے تک سزائے موت نہیں دے گا۔

اب عالمی عدالت میں دوبارہ اس کیس کی سماعت کی جائے گی۔

خیال رہے کہ اس دوران انسانی ہمدردی کی بنیاد پر پاکستان کلبھوشن کی والدہ اور اہلیہ سے بھی اس کی ملاقات کروا چکا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں