The news is by your side.

Advertisement

ترک فوج کا شام میں آپریشن، مقامی سیاست دان سمیت 10 شہری ہلاک

دمشق: شام میں ترک فوج کا بڑے پیمانے پر آپریشن جاری ہے، جبکہ شامی فورسز کے ہاتھوں مقامی سیاست دان سمیت 10 شہری بھی مارے گئے۔

تفصیلات کے مطابق ترکی کی جانب سے فوجی آپریشن میں شامی فورسز کی بھی حمایت حاصل ہے، گذشتہ روز شامی فوج کی ایک کارروائی میں ایک سیاست دان سمیت 10 شہری ہلاک ہوگئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق شامی فورسز نے شمالی شام میں ہونے والی ان ہلاکتوں کی ذمے داری قبول نہیں کی۔ البتہ کرد قیادت میں قائم سیریئن ڈیموکریٹک فورسز نے دعویٰ کیا ہے کہ شامی اور ترک فوجی عام شہریوں کی ہلاکتوں میں بھی ملوث ہیں۔

کرد قیادت میں قائم سیریئن ڈیموکریٹک فورسز کا کہنا ہے کہ شامی سرحدی علاقے میں ترک عسکری کارروائی کے نتیجے میں ہفتے کے روز سے اب تک اس کے تیس سے زائد جنگجو ہلاک ہوچکے ہیں۔

شامی تنازعے پر نگاہ رکھنے والی اپوزیشن تنظیم سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس کا کہنا ہے ترکی فوج کے آپریشن کے آغاز سے اب تک 104 سے زائد جنجگو مارے گئے ہیں، جبکہ مزید عام شہریوں کی ہلاکتوں کا بھی خدشہ ہے۔

شمالی شام پر حملہ، ہالینڈ نے ترکی کو اسلحے کی برآمد روک دی

یاد رہے کہ ترک فوج کا شام میں 20 میل تک سیف زون بنانے کے لیے فوجی آپریشن جاری ہے، گذشتہ دنوں ایک غلطی کے نتیجے میں امریکی فوجی مورچے کے قریب گولہ باری ہوئی جہاں درجنوں اہلکار تعینات تھے۔

بعد ازاں امریکی حکام کا کہنا تھا کہ ترک فوج نے شامی سرحدی شہر کوبانی میں توپ خانے سے گولاباری کی، فائر کیے گئے چند گولے امریکی دستوں کے قریب گرے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں