site
stats
پاکستان

لاہورہائی کورٹ نے پنامہ پیپرز کو’عدالتی ریکارڈ‘ کا حصہ بنانے کی اجازت دے دی

لاہور: ہائی کورٹ نے پنامہ لیکس سے متعلق درخواستوں کی سماعت کرتے ہوئے دستاویزات کوعدالتی ریکارڈ کا حصہ بنانےکی اجازت دےدی۔

تفصیلات کے مطابق جسٹس شاہد وحید کی عدالت میں درخواست گزارنے موٗقف اختیارکیاکہ پنامہ انکشافات کےبعد وزیراعظم اوران کے خاندان پر منی لانڈرنگ کا الزام ثابت ہوچکا ہے، عدالت وزیراعظم اوررحمان ملک کو بطوررکن پارلیمنٹ نااہل قراردے۔

درخواست گزارنے استدعاکی کہ عدالت مریم صفدر، حسن نواز اور حسین نواز کے خلاف منی لانڈرنگ کا مقدمہ درج کرنے کابھی حکم دے۔

عدالت نے وزیر اعظم کے خلاف کارروائی کے لیے چاروں درخواستوں کی سماعت چودہ اپریل تک ملتوی کردی۔

اس سے قبل سات اپریل کو عدالت نے پنامہ لیکس کی سماعت کرتے ہوئے اس معاملے سے متعلق تمام درخواستوں کو یکجا کرکے 11 اپریل کو سماعت کا حکم دیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top