The news is by your side.

Advertisement

لاک ڈاؤن، بھارتی پولیس نے درندگی کی انتہا کردی

نئی دہلی: بھارت میں لاک ڈاؤن کے دوران پولیس نے ڈیلیوری بوائز کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق بھارت کے مختلف شہروں میں پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکاروں کی جانب سے شہریوں سے بدسلوکی کی شکایات سامنے آئی ہیں۔

بھارتی پولیس اُن شعبوں کے رضاکاروں اور ملازمین کو بھی تشدد کا نشانہ بنارہی ہے جنہیں کروناوائرس کے پیش نظر نافذ العمل لاک ڈاؤن سے مستثیٰ قرار دیا گیا ہے۔ درندہ صفت پولیس نے اشیاء اور ادویات ڈیلیور کرنے والے بوائز کو شدید تشدد کا نشانہ بنایا۔ خیال رہے کہ مذکورہ لاک ڈاؤن میں ان ملازمین کو خصوصی استثنیٰ حاصل ہے۔

بھارت میں لاک ڈاؤن کے نتیجے میں ضروری اشیاء کی دکانیں، میڈیکل اسٹورز، کلینک اور اسپتال سمیت دیگر ہنگامی بنیادوں پر کام کرنے والے تمام شعبے کھلے رہیں گے اور ان کے ملازمین پر کسی قسم کی کوئی پابندی نہیں ہوگی۔

بھارت میں21 روزہ لاک ڈاؤن کا اعلان

حکومتی احکامات کے باوجود بھارتی پولیس مذکورہ شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد سے بھی ناروا سلوک سے پیش آرہی ہے۔ شہر ممبئی اور دہلی میں دو ڈیلیوری بوائز پر پولیس اہلکاوں نے حملہ کیا۔ دریں اثنا مختلف شہروں سے بھی اسی طرح کی شکایات موصول ہورہی ہیں۔

اس بھیانک صورت حال پر سوشل میڈیا صارفین نے بھی پولیس کو تنقید کا نشانہ بنایا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں