The news is by your side.

Advertisement

لندن: انتخابی مہم چلانے والے شخص پر نامعلوم ملزمان کا حملہ

لندن: برطانوی دارالحکومت میں عام انتخابات کی مہم چلانے والے شخص کو نامعلوم شخص نے حملہ کرکے زخمی کردیا، زخمی کو سر میں شدید چوٹ لگنے کے باعث اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق آئندہ دنوں انگلینڈ میں ہونے والے عام انتخابات کے حوالے جاری مہم کے دوران ایک شخص کو ہیملیٹ نامی ٹاور میں پمفلٹ تقسیم کرتے ہوئے نامعلوم شخص نے حملہ کرکے زخمی  کردیا ہے۔

پولیس کے مطابق ملزم نے انتخابی مہم چلانے والے شخص کے سر پر لوہے کی راڈ سے حملہ کیا ہے، جس کے نتیجے میں 30 سالہ متاثرہ شخص بری طرح زخمی ہوا ہے۔

پولیس کا کہنا تھا کہ نقاب پوش حملہ آور کے حملے میں زخمی ہونے والے متاثرہ شخص کے سر میں دس ٹانکے آئے ہیں۔ تاہم پولیس ابھی تک ملزم کو گرفتار کرنے میں ناکام رہی ہے۔

پولیس کا کہنا تھا کہ واقعے کی تحقیقات جاری ہیں، پولیس نے عینی شاہدین سے گذارش ہے کہ حادثے کی تفصیلات سے سیکیورٹی افسران کو آگاہ کریں تاکہ ملزمان کے خلاف کارروائی کی جاسکے۔

میٹروپولیٹن پولیس کے افسر ٹوماز پیٹزر کا کہنا تھا کہ ’حملہ کرنے والے نقاب پوش ملزم کے خلاف تفتیش جاری ہے، حملہ ایسے وقت میں کیا گیا تھا، جب متاثرہ شخص عام انتخابات کی مہم میں مصروف تھا‘۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ’حملہ انتخابی مہم کے باعث کیا گیا ہے یا کسی اور وجہ سے ابھی کچھ کہہ نہیں سکتے، لیکن یہ پُر تشدد واقعہ تھا‘۔

واضح رہے کہ آئندہ دنوں انگلینڈ میں عام انتخابات کا انعقاد ہوگا جس میں برطانوی عوام میئر اور 45 کونسلرز کا انتخاب کریں گے۔

واضح رہے کہ لندن میں چاقو اور فائرنگ کے واقعات میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے، رواں سال فروری کے مہینے سے ابتک 15 افراد کو حملہ کرکے قتل کیا جا چکا ہے۔

خیال رہے کہ ایک رپورٹ کے مطابق برطانیہ کے دارالحکومت لندن نے جرائم کی شرح میں امریکی شہر نیویارک کو بھی پیچھے چھوڑ دیا، لندن میں رواں سال چاقو زنی کی وارداتوں میں 50 افراد قتل ہوچکے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں