The news is by your side.

Advertisement

اسٹورمی ڈینئیلزکو ٹرمپ سے تعلقات خفیہ رکھنے پرخطیررقم ادا کی، مائیکل کوہن کا انکشاف

واشنگٹن : مائیکل کوہن کی جانب سے اسٹورمی ڈینئیلز کو دی گئی رقم کو سیکیورٹی ایجنسیوں نے انتخابی مہم میں شمار کیا، تو ٹرمپ کو حکومتی سطح پر مقدمے کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف صدرارتی انتخابات کے دوران روس سے تعلقات کے حوالے سے تفتیش پہلے سے جاری تھی، مزید ان کے وکیل کے مائیکل کوہن کو شامل تفتیش کرنا ٹرمپ اور ان کے قریبی رفقا کے لیے مشکلات کاسبب بن سکتا ہے۔

مائیکل کوہن ٹرمپ کے وکیل ہونے کے ساتھ ساتھ ٹرمپ آرگنائزیشن کے بیرون ملک کاروباری معاملات طے کرنے والی مرکزی شخصیت بھی تھے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق مائیکل کوہن کا سن 2011 میں ایک اخبار کو دیے گئے انٹرویو میں کہنا تھا کہ ’میں ان کا دایاں بازو اور وفادار ملازم ہوں‘۔

اگر مائیکل کوہن تفتیس کے دائرے میں آگئے تو ان کی مدد سے صدر ٹرمپ کے کاروبار کی ساری تفصیلات کھل کر سامنے آجائے گی، کیوں کہ ٹرمپ کے روس میں پراپرٹی کے معاملات پر پراسیکیوٹر رابرٹ میولر اور ان کی ٹیم نے دقیق نگاہ رکھی ہوئی تھی اور مائیکل کوہن اس معاملے میں ٹرمپ کے شریک تھے۔

واضح رہے کہ برطانوی جاسوس کرسٹوفر اسٹیل نے اپنی دستاویزات میں ٹرمپ اور مائیکل کوہن کا کافی ذکر کیا تھا۔


ایف بی آئی کا صدر ٹرمپ کے ذاتی وکیل کے دفتر پر چھاپہ، اہم دستاویزات قبضہ میں لے لی


میڈیا رپورٹس کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے وکیل کے خلاف کارروائی کا آغاز رابرٹ میولر کی ٹیم کو موصول ہونے والی خفیہ معلومات کی بنیاد پر کیا گیا تھا، البتہ ان کے دفتر پر چھاپہ مارنے کے لیے امریکا کے اٹارنی جنرل نے نیویارک کے جنوبی ڈسٹرکٹ کو حکم دیا تھا۔

امریکا کے سرکاری افسران اپنی تحقیقات کے دوران مائیکل کوہن سے متعلق تفصیلات جمع کررہے ہیں، جس میں ان کے ٹیکس ریکارڈ، کاروباری سرگرمیاں اور صدر ٹرمپ سے تعلقات رکھنے والی اسٹورمی ڈینئیلز نامی خاتون کو 1 لاکھ ڈالر سے زائد کی رقم شامل ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق مائیکل کوہن کا کہنا تھا کہ اسٹورمی ڈینئیلز کو اکتوبر 2016 میں ٹرمپ اور ان کے درمیان تعلقات کو خفیہ رکھنے کےلیے اپنی جیب سے 1 لاکھ 30 ہزار ڈالر کی رقم ادا کی تھی۔

خیال ظاہر کیا جارہا ہے کہ اگر امریکا کی سیکیورٹی ایجنسیوں نے اس رقم کو انتخابی مہم کی فنڈنگ میں شمار کرلیا، تو ڈونلڈ ٹرمپ کو حکومتی سطح پر مکمل مالی تفصیلات پیش نہ کرنے پر مقدمے کا سامنا بھی کرنا پڑسکتا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں