The news is by your side.

Advertisement

مانچسٹر: نیوزی لینڈ میں دہشت گرد حملے کے حق میں پوسٹ لگانے والا گرفتار

مانچسٹر: نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں مساجد پر دہشت گرد حملے کے حق میں پوسٹ لگانے والے ایک شخص کو گرفتار کر لیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق برطانوی پولیس نے ایک شخص کو گرفتار کیا ہے جس پر  الزام ہے کہ اس نےکرائسٹ چرچ میں مسلمانوں پر خوف ناک دہشت گردانہ حملے کی ایک پوسٹ میں حمایت کی ہے۔

برطانوی پولیس کا کہنا ہے کہ مشتبہ شخص نے سوشل میڈیا پر نیوزی لینڈ حملوں سے متعلق شرپسندانہ پوسٹ کی تھی۔

برطانوی پولیس نے کہا ہے کہ جو بھی حد پار کرے گا اس کے سخت خلاف ایکشن لیا جائے گا، اولڈھم سے تعلق رکھنے والے چوبیس سالہ شخص نے خوف ناک حملوں کی حمایت کی۔

پولیس کا کہنا تھا کہ یہ لوگوں کے لیے انتہائی مشکل وقت ہے، نیوزی لینڈ میں ہونے والے واقعات کی بازگشت اس وقت پوری دنیا میں گونج رہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  کرائسٹ چرچ حملہ: بین الاقوامی میڈیا کی متعصبانہ رپورٹنگ

واضح رہے کہ لندن میں سڑک کے کنارے ایک مسجد کے قریب کپڑے کا ایک ٹکڑا جلایا گیا تھا جس کی تحقیقات بھی لندن نے پولیس نے شروع کر دی ہے۔

خیال رہے کہ جمعے کے دن کرائسٹ چرچ میں 28 سالہ آسٹریلوی شخص برینٹن ٹیرنٹ نے دو مساجد پر حملہ کر کے پچاس مسلمانوں کو شہید کر دیا ہے۔

سانحہ کرائسٹ چرچ میں 6 پاکستانی شہید ہوئے، 3 پاکستانیوں کی ابھی شناخت نہیں ہو سکی، ڈی این اے سے 3 پاکستانیوں کی شناخت کی جائے گی جب کہ نیوزی لینڈ حکام نے کرائسٹ چرچ حملے میں چھ پاکستانیوں کی شہادت کی تصدیق کر دی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں