The news is by your side.

Advertisement

مٹّی کھا کر بھوک مٹانے والا مجبور شخص

کوئی بھی ذی شعور شخص جان بوجھ کر مٹی نہیں کھا سکتا کیونکہ یہ بہت ہی کرایت والا عمل ہے البتہ ایک ایسا ادھیڑ عمر شخص سامنے آیا ہے جو روزانہ ایک کلو مٹی کھاکر اپنی بھوک مٹاتا ہے۔

بھارتی شہر اندرا پردیش میں واقع ضلع کاڈاپا کے گاؤں کلاساپاڈو سے تعلق رکھنے والے 48 سالہ نوکالا کوٹشی وارا راؤ گزشتہ بیس برس سے روزانہ بھوک مٹانے کے لیے مٹی کھاتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق ادھیڑ عمر شخص ریکارڈ بنانے کے لیے نہیں بلکہ مجبوری اور بھوک کے عالم میں مٹی کھاتا ہے، حیران کن طور پر 20 سال سے روزانہ مٹی کھانے کے باوجود نوکالاشی کسی بھی بیماری میں مبتلا نہیں بلکہ وہ صحت مند زندگی بسر کررہے ہیں۔

سوئنگ ٹی وی کی جانب سے شیئر ہونے والی ویڈیو میں 48 سالہ شخص کو مٹی کھاتے دیکھا جاسکتا ہے۔ نوکالا کوٹشی اپنی مٹھی میں مٹی بھر کر بغیر پانی کے اسے کھاتا ہے اور اُسے کوئی مشکل نہیں ہوتی۔

’مجھے اب بالکل بھی پریشانی نہیں ہوتی کیونکہ مٹی کھانے کی عادت پڑ چکی ہے، 28 برس کی عمر سے میں نے مٹی کھانا شروع کی اور اب تک مجھ پر کوئی منفی اثرات نہیں ہوئے، میرے دانت بھی بالکل ٹھیک ہیں اور میں بغیر کسی مشکل کے سخت چیز بھی دانتوں سے توڑ لیتا ہوں‘۔

اس سے قبل 78 سالہ خاتون کی ویڈیو بھی وائرل ہوچکی ہے جو اپنی صحت کو بہتر رکھنے کے لیے گزشتہ 6 برس سے روزانہ دو کلو مٹی کھا رہی ہیں۔ ان خاتون کا نام کوسمہ وتی اور تعلق بھی انڈیا سے ہی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں