The news is by your side.

Advertisement

سب سے بڑے مسئلے کی طرف دنیا کی مجرمانہ خاموشی

اسلام آباد: پاکستان میں تعینات جرمن سفیر مارٹن کوبلر کا کہنا ہے کہ ہماری زمین موسمیاتی تغیرات یعنی کلائمٹ چینج کے حوالے سے سخت خطرات میں ہیں، لیکن ابھی تک ہم اس کے بارے میں مجرمانہ خاموشی اختیار کیے ہوئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں منعقدہ ایک تقریب میں پاکستان میں تعینات جرمن سفیر مارٹن کوبلر نے اس بات پر تشویش کا اظہار کیا کہ تاحال ماحولیاتی مسائل کو وہ توجہ نہیں دی جارہی جو دی جانی چاہیئے۔

جرمن سفیر کا کہنا تھا کہ خوبصورت قدرتی حسن سے مالا مال ہونے کے باوجود پاکستان ماحولیاتی خطرات کا شکار ہے۔

انہوں نے اس امر پر افسوس کا اظہار کیا کہ پولینڈ میں اس وقت ماحولیات کی سب سے بڑی کانفرنس جاری ہے جس میں نہایت اہم فیصلے کیے جانے ہیں، تاہم اس بارے میں پاکستانی ذرائع ابلاغ بالکل خاموش ہیں۔

انہوں نے کہا، ’اقوام متحدہ کے مطابق سنہ 2050 تک ہمارے سمندروں میں آبی حیات سے زیادہ پلاسٹک موجود ہوگی۔ یہ پوری دنیا کی معیشت کو بری طرح متاثر کرے گا اس کے باوجود ہم مجرمانہ خاموشی اختیار کیے ہوئے ہیں‘۔

مارٹن کوبلر نے ماحولیاتی مسائل اجاگر کرنے کے سلسلے میں صحافیوں کی کاوشوں کو بھی سراہا جو تمام تر مشکلات اور دباؤ کے باجود کلائمٹ چینج اور اس سے ہونے والے نقصانات کے بارے میں لوگوں کو آگاہ کر رہے ہیں۔

تقریب میں ماحولیات پر کام کرنے والے صحافیوں کی کاوشوں کا اعتراف کرتے ہوئے انہیں تعریفی اسناد سے بھی نوازا گیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں