The news is by your side.

Advertisement

طیارے کی تباہی کا اعتراف، ایران میں بڑے پیمانے پر احتجاج ، ذمہ داروں کی برطرفی کا مطالبہ

تہران : تہران سمیت مختلف شہروں میں ہزاروں افراد کا احتجاج جاری ہے اور مظاہرین نے طیارہ حادثے کے ذمےداروں کی برطرفی کا مطالبہ کردیا ہے، ٹرمپ نے ایرانی مظاہرین سے اظہار یکجہتی کیا۔

تفصیلات کے مطابق یوکرین کے طیارے کی ایرانی میزائل سے تباہی کے بعد ایران میں مظاہرے جاری ہے ، تہران سمیت مختلف شہروں میں ہزاروں افراد سڑکوں پر آگئے اورطیارہ متاثرین کو انصاف کی فراہمی کا مطالبہ کیا۔

تہران میں یوکرین طیارہ حادثے میں جاں بحق افراد کی یاد میں شمعیں روشن کی گئیں اور ذمہ داروں کیخلاف کارروائی کا مطالبہ کیا گیا، شمعیں روشن کرنے کی تقریب میں موجود برطانوی سفیر کو مختصر وقت کے لئے حراست میں لے کر رہا کردیا گیا۔

برطانیہ نے سفیر کو حراست میں لئے جانے پر شدید احتجاج اور مذمت کی ، برطانوی وزیرخارجہ ڈومینک راب کا کہنا تھا کہ ایران نے سفیر کو حراست میں لے کرعالمی قوانین کی خلاف ورزی کی، سفیراحتجاج میں شریک نہیں تھے ، شمعیں روشن کرکے چلے گئے تھے۔

دوسری جانب امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ نے ایرانی مظاہرین سے اظہاریکجہتی کرتے ہوئے فارسی میں بھی ٹوئٹ کیا، صدرٹرمپ کا کہنا تھا ایران کی صورتحال پرگہری نظرہے۔

یاد رہے یوکرین کا مسافرطیارہ تہران ائیرپورٹ سے پروازکے کچھ دیربعدایرانی میزائل لگنے سے تباہ ہوگیا تھا، حادثے میں 176 افراد جاں بحق ہوئے تھے۔

بعد ازاں ایرانی ایرواسپیس کمانڈر علی حاجی زادے نے یوکرین طیارےکی تباہی کی ذمےداری قبول کرتے ہوئے کہا تھا واقعہ پرقوم سے معافی مانگتے ہیں ، یوکرین طیارے کو غلطی سے کروز میزائل سمجھا گیا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں