The news is by your side.

Advertisement

سدا بہار فلمی دھنوں کے خالق ماسٹر عبداللہ کی برسی

31 جنوری 1994ء کو پاکستان کے نام ور فلمی موسیقار ماسٹر عبداللہ لاہور میں وفات پاگئے تھے۔ آج اس لیجنڈ موسیقار کی برسی ہے۔ ماسٹر عبداللہ نے انور کمال پاشا کی فلم سورج مکھی سے فلمی دنیا میں‌ قدم رکھا تھا۔ ان کی دھنوں میں خالص راگ راگنیوں کا رچائو ہوتا تھا جس نے انھیں‌ فلمی دنیا میں ایک صاحبِ طرز موسیقار کے طور پر شہرت اور مقام دیا۔

ماسٹر عبداللہ کی ترتیب دی ہوئی موسیقی میں‌ فلم ٹیکسی ڈرائیور، بابل، نظام، ضدی، شریف بدمعاش، بدل گیا انسان، اک سی چور، ہرفن مولا، دلیر خان، لاڈو، میدان، کمانڈو، وارث، شہنشاہ، پیار دی نشانی، رنگی، اکھ لڑی بدو بدی، کشمکش، رستم، ہیرا پتّھر، دل ماں دا، قسمت اور ضدّی کے نام سرِفہرست ہیں۔

فلم انڈسٹری کو کئی سدا بہار دھنیں دینے والے لیجنڈ موسیقار ماسٹر عبداللہ نے اردو سے زیادہ پنجابی دھنیں فلموں کے لیے کام کیا۔ انھوں نے اپنی موسیقی سے شائقین ہی نہیں‌ معروف گلوکاروں‌ کو بھی متاثر کیا اور وہ ان کی تخلیق کردہ دھنوں‌ پر گیت ریکارڈ کروانے کے خواہش مند نظر آتے تھے۔

فلم واہ بھئی واہ، لاڈو، ملنگی، کمانڈر، زندگی، رنگو جٹ اور دیگر فلموں کی شان دار کام یابی میں ماسٹر عبداللہ کی موسیقی کا بڑا دخل تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں