The news is by your side.

Advertisement

میشا شفیع جنسی ہراسانی کیس، گلوکار علی ظفر آبدیدہ ہوگئے

لاہور: معروف گلوکار اور اداکار علی ظفر نے میشا کو مصالحت کی پیش کش کرتے ہوئے کہا ہے کہ میشا اور میں ایک دوسرے کو جانتے ہیں، یہ جو ہورہا وہ معاشرے کے لیے اچھا نہیں، اس معاملے کو ختم کرو، علی ظفر آبددیدہ ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز میشا شفیع کے خلاف لاہور ہائی کورٹ سے کیس کا فیصلہ جلد کرنے کے خواہش مند علی ظفر میشا شفیع کیس پر نجی ٹی وی کے پروگرام میں رو پڑے۔

علی ظفر نے کہا کہ میشا آپ ایک قدم بڑھاؤ میں 10 قدم بڑھانے کو تیار ہوں، مجھے ہتک عزت کیس کے پیسے نہیں چاہئیں، ہتک عزت کیس کے پیسے مل بھی گئے تو خواتین کی فلاح پر خرچ کروں گا۔

انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ سے لے کر دیگر بڑی کمپنیوں کو جو مجھے کام دیتے ہیں، انہیں سوشل میڈیا پر ٹیگ کیا جارہا ہے تاکہ میرا کیریئر ختم ہوجائے۔

مزید پڑھیں: علی نے میشا کو معاف کر بھی دیا تو میں اسے ہر گز معاف نہیں کروں گی، اہلیہ عائشہ 

علی ظفر کا کہنا تھا کہ جس مقام پر ہراساں کیے جانے کا الزام لگایا گیا وہاں دو عورتیں اور بھی موجود تھیں، میشا نے اس مقام سے جانے کے بعد مجھے پیغام بھیجا جس کو میں نے عدالت میں بطور ثبوت پیش کیا۔

علی ظفر نے کہا کہ میں بے قصور تھا، بے قصور ہوں، عدالت میشا کا الزام مسترد کرچکی ہے، اپنے حق کے لیے جو مناسب لگا وہ کروں گا، لوگ میرے ساتھ تصویریں کھنچواتے ہیں اور کئی مرتبہ مجھے ہراساں کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ کچھ دیر قبل علی ظفر کی اہلیہ عائشہ علی کا کہنا تھا کہ ’علی نے اگر میشا شفیع کو معاف کربھی دیا تو میں اسے ہر گز معاف نہیں کروں گی۔‘

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں