The news is by your side.

Advertisement

پہلی ششماہی: قرضوں، اخراجات، ٹیکس وصولی اور خسارے کی تفصیلات جاری

اسلام آباد: وزارت خزانہ نے مالی سال کی پہلی ششماہی کی فسکل آپریشن رپورٹ جاری کر دی۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق وزارت خزانہ نے رپورٹ میں کہا ہے کہ جولائی تا دسمبر بجٹ خسارہ 1138 ارب روپے ہوگیا ہے، مالی سال کی پہلی ششماہی میں بجٹ خسارہ جی ڈی پی کا 2.5 فی صد رہا۔

وزارت خزانہ کے مطابق جولائی تا دسمبر مجموعی اخراجات 4489 ارب روپے رہے، پہلی ششماہی میں سود کی مد میں 1475 ارب سے زائد کی ادائیگیاں ہوئیں، دفاعی اخراجات 486 ارب 58 کروڑ 50 لاکھ روپے رہے۔

رپورٹ کے مطابق جولائی تا دسمبر مجموعی آمدن 3351 ارب روپے رہی، اس دوران ٹیکس آمدن 2455 ارب 90 کروڑ روپے رہا، وفاق نے 2210 ارب اور صوبوں نے 245 ارب روپے کا ٹیکس جمع کیا۔

جولائی تا دسمبر 1138 ارب روپے کا ملکی و غیر ملکی قرض لیا گیا، جس میں بیرونی قرض 454 ارب 45 کروڑ روپے ہے جب کہ اندرونی قرض 683 ارب 39 کروڑر وپے کا ہے۔

جولائی سے دسمبر تک 830 ارب کے براہ راست ٹیکس وصول کیے گئے، اس دوران 337 ارب روپے کسٹمز ڈیوٹی وصول کی گئی، سیلز ٹیکس مد میں 918 ارب، ایکسائز ڈیوٹی کی مد میں 123 ارب وصول کیے گئے۔

جولائی سے دسمبر تک 895 ارب روپے کا نان ٹیکس وصول کیا گیا، 6 ماہ میں 47 ارب 54 کروڑ روپے کی پٹرولیم لیوی وصول کی گئی، اسٹیٹ بینک کا منافع 372 ارب روپے رہا، جب کہ گیس ڈویلپمنٹ سرچارج کی مد میں 275 ارب روپے وصول کیے گئے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں