The news is by your side.

بلبل پاکستان نیّرہ نور انتقال کر گئیں

لاہور: موسیقی کا ایک عہد تمام ہوا، بلبل پاکستان نیّرہ نور انتقال کر گئیں۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کی عظیم گلوکارہ نیّرہ نور انتقال کر گئیں، ان کی عمر 72 برس تھی، اور وہ کافی عرصے سے علیل تھیں۔

خاندانی ذرائع کا کہنا ہے کہ مرحومہ کی نماز جنازہ آج سہ پہر کراچی میں ادا کی جائے گی۔

نیّرہ نور کو فنی خدمات کے اعتراف میں ان کے فنی سفر کے دوران پرائڈ آف پرفارمنس، نگار اور دیگر متعدد اعزازات سے نوازا گیا۔ 2005 میں انھیں حکومت پاکستان نے صدارتی تمغہ برائے حسنِ کارکردگی سے نوازا۔

ملی نغموں میں بھی نیّرہ نور نے سامعین کے دلوں کو گرمایا اور پلے بیک سنگنگ میں بھی اپنی گائیکی کا بھرپور مظاہرہ کیا۔

نیّرہ نور نے برسوں پہلے گلوکاری چھوڑ دی تھی لیکن ان کے گائے گیت اور غزلیں ہر دور میں مقبول و معروف رہیں، انھوں ںے اپنا فنی سفر 70 کی دہائی سے شروع کیا تھا، اور فلموں اور ڈراموں کے لیے بھی پلے بیک سنگنگ کی۔

نیّرہ کے معروف گانوں، ملی نغموں اور غزلوں میں: تیرا سایہ جہاں بھی ہو سجنا، روٹھے ہو تم تم کو کیسے مناؤں پیا، آج بازار میں پا بجولاں چلو، کہاں ہو تم چلے آؤ، اے عشق ہمیں برباد نہ کر اور وطن کی مٹی گواہ رہنا سمیت دیگر بہت سے شامل ہیں۔

نیّرہ نور کے ایک انٹرویو کے مطابق انھوں نے اپنا بچپن آسام میں گزارا، تقسیم کے بعد ان کا گھرانہ پاکستان منتقل ہوا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں