The news is by your side.

Advertisement

کورونا وائرس کا خوف، ماؤنٹ ایورسٹ کے حوالے سے بڑا فیصلہ

کھٹمنڈو : نیپال کی حکومت نے ہلاکت خیز کرونا وائرس سے بچاؤ کیلئے دنیا کی سب سے بڑی چوٹی ماؤنٹ ایورسٹ کو کوہ پیماؤں کے لیے بند کردی، کوہ پیماؤں کے اجازت نامے منسوخ کردئیے گئے۔

تفصیلات کے مطابق حکومت نیپال نے مہلک کرونا وائرس کے پیش نظر ماؤنٹ ایورسٹ کو سر کرنے کیلئے آنے والے کوہ پیماؤں کے اجازت ناموں کو 14مارچ سے 30 اپریل تک معطل کردیا ہے۔

نیپالی حکومت نے سیاحوں کو ہدایت جاری کی ہے کہ 14 مارچ سے ملک میں آنے والے سیاح 14 روز کا قرنطینہ اختیار کریں۔ جب کہ چین نے اس سے قبل ہی اپنے علاقے سے ماؤنٹ ایورسٹ کو بند کررکھا ہے۔

اطلاعات کے مطابق نیپال ماؤنٹ ایورسٹ پر مہم جوئی کرنے والوں کو اجازت نامے جاری کر کے تقریباً 4 ملین ڈالر کماتا ہے۔ امریکا، بھارت، چین، برطانیہ، جاپان اور جنوبی کوریا سے زیادہ تر مہم جو ماؤنٹ ایورسٹ پر مہم جوئی کے لیے آتے ہیں جب کہ یہ حکومت کے ریونیو کا ایک بڑا ذریعہ بھی ہے۔

نیپالی وزیر اعظم کے دفتر کے سیکریٹری نارائن پرساد بیدار نے اپنے ایک بیان میں بتایا کہ حکومت نے 30اپریل تک تمام سیاحتی ویزے روکنے کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ رواں سیزن کی مہم جوئی کو منسوخ کردیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ ہلاکت خیز کرونا وائرس سی او وی آئی ڈی-19سے بھارت میں اب تک 78 افراد متاثر ہوچکے ہیں جبکہ ایک مریض مہلک وائرس میں مبتلا ہونے کے بعد دنیا سے ہی رخصت ہوگیا۔

واضح رہے کہ دنیا بھر میں کرونا وائرس میں مبتلا 4،990 افراد اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں جبکہ 135،165 افراد متاثر

ہوچکے ہیں، کرونا وائرس کے وبائی صورت اختیار کرنے کے باعث چین کے بعد اٹلی میں سب سے زیادہ اموات واقع ہوئی ہیں۔
چین اور یورپ سمیت دنیا بھر کے ممالک کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے میں تاحال ناکام ہیں لیکن اس وبا میں مبتلا ہونے والے70،407افراد صحت یاب بھی ہوچکے ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں