شمالی کوریا کے سرابرہ کی مون جے ان سے اچانک ملاقات، امریکی فیصلوں پر تبادلہ خیال
The news is by your side.

Advertisement

شمالی کوریا کے سربراہ کی مون جے ان سے اچانک ملاقات، امریکی فیصلوں پر تبادلہ خیال

پیانگ یانگ: شمالی کوریا کے سربراہ کم جونگ ان نے جنوبی کوریا کے رہنما مون جے ان سے اچانک ملاقات کی اس دوران شمالی کوریا سے متعلق امریکی فیصلوں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق دونوں رہنماؤں کے درمیان ملاقات شمالی اور جنوبی کوریا کے سرحدی علاقے پر ہوئی، دو گھنٹے کی اس ملاقات میں کم جونگ ان اور مون جے ان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے حالیہ فیصلوں پر بات چیت کی۔

عالمی میڈیا کا کہنا ہے کہ تین روز قبل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ ان سے ملاقات کی منسوخی کا اعلان کیا گیا تھا جس کے بعد شمالی کوریا اور جنوبی کوریا کے رہنماؤں نے ملاقات کی ہے تاکہ اس موضوع پر گفتگو کرتے ہوئے مستقبل کا لائحہ عمل تیار کیا جائے۔


شمالی کوریا بحران کا خاتمہ ٹرمپ اور کم جونگ کی ملاقات سے مشروط ہے: جاپانی وزیر اعظم


شمالی کوریائی حکام کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ دونوں رہنماؤں کے درمیان ہونی والی ملاقات کامیاب رہی، دونوں ممالک کے سربراہان دورانِ ملاقات کافی خوشگوار موڈ میں تھے، ملاقات سے متعلق مکمل تفصیلات اور اعلامیہ آج جاری کیا جائے گا۔

خیال رہے کہ تین روز قبل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے شمالی کوریا کے سربراہ کم جونگ سے ہونے والی ملاقات ملتوی کردی تھی، دونوں رہنماؤں کو جون کی 12 تاریخ کو سنگاپور میں ملنا تھا۔


کم جونگ ان کسی بھی وقت امریکی صدرسے ملاقات کو تیار ہیں، شمالی کوریا


علاوہ ازیں وائٹ ہاؤس کی جانب سے ٹرمپ کا خط جاری کیا گیا تھا، جس میں شمالی کوریا کے سربراہ کا نام تحریر تھا، ٹرمپ نے اپنے خط میں کہا تھا کہ کم جونگ کے حالیہ بیان کے بعد اب سنگاپور میں ہونے والی شیڈول ملاقات کا امکان بالکل بھی نہیں کیونکہ شمالی کوریا کے سربراہ نے ایک بار پھر کھلی دشمنی ظاہر کردی ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں