The news is by your side.

Advertisement

تارکین وطن کا انگلش چینل عبور کرنا بڑھ گیا، برطانیہ کی تشویش

لندن: تارکین وطن کی جانب سے غیرقانونی طور پر انگلش چینل کو عبور کرنے کے واقعات میں اضافے پر برطانوی حکومت نے تشویش کا اظہار کیا ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق برطانوی وزیر کیرولین نوکس نے کہا ہے کہ حالیہ دنوں میں انگلش چینل کو غیرقانونی طریقے سے عبور کرنے کے واقعات میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے جس پر برطانیہ کو تشویش ہے۔

برطانوی وزیر کے مطابق تارکین وطن میں سے کچھ تو واضح طور پر منظم جرائم پیشہ گروہوں کے ذریعے پلان کیے جاتے ہیں جبکہ کچھ انفرادی طور پر موقع دیکھتے ہوئے سمندر پار کرکے برطانیہ پہنچنے کی کوشش کرتے ہیں۔

کیرولین نوکس نے کہا کہ اس تناظر میں سب سے پہلے جمعرات کے روز کینٹ قصبے میں ایک ساحل سے ملنے والے گیارہ ایرانی تارکین وطن تھے جو شمالی فرانس سے کشتی پر یہاں تک پہنچے تھے۔

برطانوی وزارت داخلہ کے مطابق تارکین وطن کو طبی امداد دی جاچکی ہے جبکہ تمام بالغ تارکین وطن کو امیگریشن حکام کے حوالے کردیا گیا ہے، ان کے ہمراہ آنے والے بچوں کو سوشل سروس مہیا کرنے والے اداروں کو منتقل کردیا گیا ہے۔

برطانوی وزارت داخلہ کے مطابق ڈوور کی بندرگاہ کے قریب دو اور کشتیاں ملی ہیں جن میں 14 تارکین وطن سوار تھے۔

مزید پڑھیں: غیر قانونی طور پر کشتی میں برطانیہ اور فرانس جانے والے چالیس تارکین وطن گرفتار

واضح رہے کہ انگلش چینل میں برطانوی اور فرانسیسی کوسٹ گارڈز نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے کئی کشتیوں پر سوار چالیس غیرملکی تارکین کو بچا کر اپنی تحویل میں لیا تھا۔

برطانیہ اور فرانس کے کوسٹ گارڈز نے یہ کارروائی کرسمس کے دن کی تھی، برطانوی حکام کے مطابق مختلف کشتیوں پر سوار تارکین وطن کا تعلق عراق، ایران اور افغانستان سے ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں