site
stats
عالمی خبریں

روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی، او آئی سی کا ہنگامی اجلاس طلب

جدہ : میانمار میں روہنگیا مسلمانوں پر ظلم، تشدد اور ملک بدر کیے جانے پر اسلامی تعاون کی تنظیم (او آئی سی) نے کل قازقستان کے دارالحکومت آستانہ میں ہنگامی اجلاس  طلب کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق میانمار میں مظلوم روہنگیائی مسلمانوں کی آہ و بکا نے سرحدوں کی دیوار چیرتے ہوئے اسلامی ممالک کی عالمی تنظیم او آئی سی کے حکام تک پہنچ گئی ہے جس کے بعد کل آستانیہ میں ہنگامی اجلاس طلب کرلیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق کل آستانہ میں ہونے والے اجلاس کی صدارت ترک صدر طیب اردگان کریں گے جو کہ سائنس وٹیکنالوجی سربراہ اجلاس کی سائیڈ لائن پر ہوگا اجلاس میں روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی اور کسمپرسی پر تبادلہ خیال کیا جائے گا اور اس اہم معاملے پر او آئی سی کا مشترکہ مؤقف سامنے لایا جائے گا۔

خیال رہے کہ گزشتہ چار ماہ سے جاری روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی، قتل عام اور سیکڑوں بستیاں جلانے کے باعث لاکھوں روہنگیائی مسلمان در بدر ہوں گئے جنہیں کہیں پناہ نہیں مل پارہی کچھ بنگلہ دیش پہنچ گئے ہیں جب کہ زیادہ تر تاحال سطح دریا پر کشتیوں پر زندگی بسر کرنے پر مجبور ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ او آئی سی کی جانب سے ہنگامی اجلاس طلب کرنا دیر آید درست آید کے مترادف ہے اور ترک صدر کی سربراہی کے باعث توقع کی جارہی ہے کہ اجلاس اس ایشو پر کوئی ٹھوس اقدامات اُٹھانے کی پوزیشن میں ہوگا اور روہنگیائی مسلمانوں کے مشکلات میں کمی واقع ہو پائے گی۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top