The news is by your side.

Advertisement

کیا کھانے کے بعد ٹھنڈا پانی پینے سے دل کی بیماری یا کینسر ہوسکتا ہے؟

سماجی رابطے کی ویب سائٹ فیس بک پر کچھ صارفین کی جانب سے غیر مصدقہ باتیں شیئر کی جاتی ہیں جن کی دیگر لوگ تشہیر شروع کردیتے ہیں جس کے نتیجے میں سنسنی پھیل جاتی ہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ایک صارف کی جانب سے صحت سے متعلق ایک پوسٹ شیئر کی گئی جس میں انہوں نے بتانے کی کوشش کی کہ کھانے کے بعد ٹھنڈا پانی پینا دل کی بیماریوں اور کینسر کا سبب بن سکتا ہے۔

صارف نے یہ پوسٹ اپریل 2013 میں کی جس کے بعدحال ہی میں یہ ایک دم یہ شیئر ہونا شروع ہوئی اور اب تک اسے 3 لاکھ 20 ہزار سے زائد صارفین شیئر کرچکے۔

مزید پڑھیں: ہارٹ اٹیک سے قبل ظاہر ہونے والی 8 بڑی علامات

انہوں نے اپنی لمبی تحریر میں لکھا تھا کہ ’یہ بہتر ہے کہ کھانے کے بعد آپ کولڈ ڈرنک پی لیں کیونکہ تیل والی چیزیں کھانے کے بعد ٹھنڈا پانی جسم میں بہت خرابیاں پیدا کرتا ہے، ایک وقت ایسا بھی آتا ہے کہ انسان کینسر کے عارضے میں مبتلا ہوجاتا ہے‘۔

کیا واقعی کھانے کے بعد ٹھنڈا پانی پینے سے سنگین بیماریاں لاحق ہوسکتی ہیں؟

فرانسیسی خبررساں ادارے نے معاملے کی حساسیت کو محسوس کرتے ہوئے یہ سوال طبی ماہرین کے سامنے رکھا۔

ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ یہ دعویٰ بالکل غلط ہے کیونکہ ابھی تک یہ بات ثابت نہیں ہوئی اور نہ ہی کوئی ایسا نقصان سامنے آیا۔ کینسر کونسل آسٹریلیا کے پروفیسر کا کہنا تھا کہ اس بات میں کوئی صداقت نہیں کہ کھانے کے بعد ٹھنڈا پانی پینے سے کینسر یا دل کا عارضہ لاحق ہوسکتا ہے، کوئی بھی مائع چیز ہمارے جسم کے اندرونی درجہ حرارت کو ضرور تبدیل کرتی ہے جس سے نظام ہاضمہ یا مدافعت میں تبدیلی ہوسکتی ہے۔

امریکی پروفیسر کا کہنا تھا کہ یہ کوئی حتمی بات نہیں اور نہ ہی اس حوالے سے کوئی ثبوت پیش کیا گیا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں