The news is by your side.

Advertisement

ہماری شادی نسلی تعصب کے خلاف ایک مثال ہے، شنیرا اکرم

کراچی : شنیرا اکرم نے انسٹاگرام پر ایک تصویر شیئر کرتے ہوئے کہا کہ وہ اور ان کے شوہر وسیم اکرم اور ان کی کامیاب شادی نسلی تعصب کے خلاف ایک مضبوط مثال ہے۔

تفصیلات کے مطابق وسیم اکرم کی اہلیہ شنیرا اکرم اپنے شوہر کے علاوہ اپنی سماجی خدمات اور انسانی حقوق کےلیے آواز اٹھانے کی وجہ سے بھی کافی معروف ہیں، انہوں نے اپنی حالیہ پوسٹ میں رنگ و نسل کی بنیاد پر تعصب کرنے والوں کو آڑے ہاتھوں لیا ہے۔

View this post on Instagram

‪“He only married her because she’s white. She must be easy! Does his skin smell different? Why couldn’t he marry a Brown girl? It’s not natural for two skin colours to mix. Interracial relationships never work. What spell did she put on him? He will never take you seriously because your white. Your both so different. You will never be accepted as a real couple. His sons can’t have a Gori stepmother. If you have children they will grow up confused and treated differently”. We have had it on both sides, it’s ugly and unwarranted! Skin colour only troubles the people in this world who sees it. Like millions of others, We are living proof that colour means absolutely nothing, LOVE does. #KeepFighting #RacismIsRasicmInAnyCapacity #TheWorldIsColourful #RacismHasNoPlaceInThisWorld #RacismIsNotABeliefItsADisease

A post shared by Shaniera Akram (@iamshaniera) on

وسیم اکرم کی اہلیہ تصویر کے ساتھ لکھا کہ ’لوگ کہتے تھے گوری سے ہی شادی کیوں کی؟ کسی دیسی لڑکی سے شادی کیوں نہیں کی؟ دو الگ الگ رنگ والے لوگوں کا ملنا قدرتی نہیں ہے اور یہ رشتہ زیادہ دیر نہیں چل سکتا۔

بچے اپنی سوتیلی ماں کو کسی گوری کے روپ میں قبول نہیں کریں گے اور برتاوٗ بھی دوسروں سے الگ ہوگا۔

انہوں نے بتایا کہ لوگوں نے ہماری شادی پر ایسی ایسی باتیں کیں لیکن یہ محض باتیں ہی تھیں کیونکہ جلد کی رنگت صرف انسانوں کو پریشان ہی کرتی ہے وگرنہ اس سے رشتوں پر کوئی اثر نہیں پڑتا، ہماری مثال دنیا کے سامنے ہیں ہم بہت خوشحال زندگی گزار رہیں ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں