The news is by your side.

Advertisement

پاکستان اور افغانستان کے مابین سرحدی ٹرمینل بند، پیدل آمد و رفت پر پابندی

اسلام آباد: این سی او سی نے افغانستان کے ساتھ بارڈر ٹرمینل فوری بند کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) نے لینڈ بارڈر منیجمنٹ پالیسی پر نظر ثانی کر لی ہے، ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان افغانستان کے مابین بارڈر ٹرمینل فوری بندکرنے کا فیصلہ ہوا ہے۔

این سی او سی نے پاک افغان بارڈر ٹرمینل بند کرنے کی منظوری دے دی، بارڈر بندش کا فیصلہ افغانستان میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے باعث کیا گیا ہے، فیصلے کے مطابق دونوں ممالک کے مابین پیدل آمد و رفت مکمل بند رہے گی۔

این سی او سی کا کہنا ہے کہ افغانستان میں پہلے سے موجود پاکستانیوں کو واپس آنے کی اجازت ہوگی، تاہم واپس آنے والے پاکستانیوں کو کرونا ٹیسٹ کے بعد آنے کی اجازت ہوگی۔

این سی او سی کے مراسلے کے مطابق پاکستان میں مقیم افغان شہری پابندی کے باوجود واپس جا سکیں گے، جب کہ میڈیکل ایمرجنسی کی صورت میں افغانستان سے پاکستان آنے کی بھی اجازت ہوگی، تاہم اس صورت میں آمد کرونا ٹیسٹنگ سے مشروط ہوگی۔

افغانستان اور پاکستان کے مابین ایئر لائن آپریشن کارگو موومنٹ جاری رہے گی، این سی او سی نے فیصلے سے متعلق وزارت خارجہ کو آگاہ کر دیا۔

واضح رہے کہ پاکستان کی جانب سے افغانستان میں امن مذاکرات کے سلسلے میں ناقابل فراموش کردار ادا کرنے کے باوجود افغان مشیر قومی سلامتی نے پاکستان مخالف بیان جاری کر دیا تھا، جس پر آج دفتر خارجہ کا رد عمل آیا تھا۔

دفتر خارجہ نے کہا کہ افغان مشیر قومی سلامتی حمداللہ محب کے الزامات کی مذمت کرتے ہیں، افغان امن عمل میں پاکستان کے کردار کو عالمی سطح پر سراہا گیا ہے، زاہد حفیظ نے بیان میں کہا کہ افغان این ایس اے کے الزامات امن عمل کو خراب کرنے کی کوشش ہے۔

ترجمان نے کہا افغان این ایس اے کو یاد دہانی کراتے ہیں کہ دونوں ملکوں میں ایک فورم موجود ہے، اے پیپس فورم میں طے پایا جا چکا ہے کہ الزام تراشی سےگریز کیا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں