The news is by your side.

Advertisement

پاک فوج کے 3 میجر انضباطی کارروائی پر ملازمت سے برطرف

راولپنڈی : پاک فوج کے  تین میجر انضباطی کارروائی پرملازمت سےبرطرف کردیا گیاجبکہ   2افسران کو دو دو سال کیلئے قید بامشقت بھی سنائی گئی ، افسران اختیارات کےغلط استعمال،غیر قانونی سرگرمیوں میں پائے گئے۔

تفصیلات کے مطابق پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے ادارے آئی ایس پی آر نے کہا ہے کہ پاک فوج کے 3میجر انضباطی کارروائی پرملازمت سے برطرف کردیا گیا ہے ، تینوں افسران ڈسپلن کی خلاف ورزی کےمرتکب پائے گئے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق افسران کو 2،2 سال کیلئے قید بامشقت بھی سنائی گئی، افسران اختیارات کے غلط استعمال، غیر قانونی سرگرمیوں میں پائے گئے۔

یاد رہے رواں سال مئی میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے دو فوجی افسران اور ایک سول افسر کی سزاؤں کی توثیق کی تھی ، لیفٹیننٹ جنرل (ر) جاوید اقبال کی 14 سال قید بامشقت، جب کہ بریگیڈیئر (ر) راجہ رضوان اور ایک سول افسر ڈاکٹر وسیم اکرم کی سزائے موت میں توثیق کی گئی تھی۔

مزید پڑھیں: آرمی چیف نے دو افسران کی سزائے موت، ایک افسر کی قید کی توثیق کردی

ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا تھا یہ سزائیں مسلح افواج کے سخت احتساب کے نظام کامظہر ہے، افسران کودی گئی سزاؤں کا تعلق 3 مختلف کیسز سے ہے، افسران کو ان کےجرائم پرسخت ترین سزائیں دی گئیں۔

تینوں افسران کو حساس راز افشا کرنے اور جاسوسی کے الزامات پر سزائیں سنائی گئیں، مذکورہ افسران پر آرمی ایکٹ کے تحت مقدمات چلائے گئے تھے۔

خیال رہے گزشتہ دو سال کے دوران400افسران کو سزائیں سنائی جاچکی ہیں، جس میں برطرفیاں بھی شامل ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں